نیویارک،گندے پانی سے بجلی بنانے والی کاغذی بیٹری

نیویارک،گندے پانی سے بجلی بنانے والی کاغذی بیٹری
نیویارک،گندے پانی سے بجلی بنانے والی کاغذی بیٹری

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی سائنسدانوں نے ایک ایسی کم خرچ کاغذی بیٹری بنالی ہے جسے نہ صرف تہہ کیا جاسکتا ہے بلکہ وہ گندے پانی میں موجود جرثوموں سے بجلی بنانے کی صلاحیت بھی رکھتی ہے۔ تجرباتی کاغذی بیٹریاں بھی بہت مہنگی ثابت ہوئی ہیں اور اسی وجہ سے اب تک ان کا تجارتی پیمانے پر استعمال شروع نہیں ہوسکا ہے لیکن اس اچھوتی بیٹری کی تفصیل کے مطابق اسے پسماندہ علاقوں میں طبی سینسرز کو بجلی فراہم کرنے کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے تاہم مزید امکانات پر بھی غور کیا جاسکتا ہے۔یہ نئی کاغذی بیٹری جو کسی موٹے سیاہ کاغذ کی طرح دکھائی دیتی ہے، نیویارک میں واقع بنج ہیمپٹن یونیورسٹی کے چینی نڑاد سائنسدان نے ایجاد کی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -