نوشہرہ میں اندھے قتل کا ڈراپ سین‘ بھائی قاتل نکلا

نوشہرہ میں اندھے قتل کا ڈراپ سین‘ بھائی قاتل نکلا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


نوشہرہ(بیورورپورٹ) میرہ اضاخیل اند ھے قتل کیس کا ڈراپ سین کہانی بکریاں چرانے اور اپنے ہی بھائی فائرپر لگ کر جاں بحق ہونے کی نکلی ؛پولیس کو گمراہ کرنے کیلئے من گھڑات کہانی اضاخیل پولیس کو جدید خطوط پر استوار تفتیش سے سب کچھ سامنے آگیا۔واحد محمود ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نوشہرہ تفصیلات کے مطابق مورخہ 14/12/2016کو مسمی محمدرحیم ولد محمد نبی سکنہ افعانستان حال اضاخیل پایان نے یوں رپورٹ درج کروائی کہ میں گھر میں موجود تھا۔کہ مسمی نرمین گل ولد زرمحمد سکنہ افعانستان حال پبی زیارت نے آکر بتایاکہ میں اور اپ کا بھائی عبدالقیوم سیروتفریح کے لئے میرہ اضاخیل گئے تھے ۔کہ اچانک چند نامعلوم افراد نے ہم پر کالاشکوف سے فائرنگ شروع کردی جس میں عبدالقیوم لگ کر جان بحق ہواجبکہ میں فرار ہونے میں کامیاب ہوامیں حقیقت حال جاننے کے لئے خود اس کے ساتھ گیا۔دیکھا تو واقعی میرا بھائی فوت شدہ پڑاتھا۔تھانہ اضاخیل میں نامعلوم ملزمان کے خلاف علت 710مورخہ 14/12/2016جرم 302/324PPCدرج کیاگیا ۔ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نے SPانوسٹی گیشنِ جہانزیب خان سر براہی میں DSPپبی سرکل خان خیل خان ،SHOتھانہ اضاخیل آصف مومن OIIتھانہ اضاخیل اختر حسین پر مشتمل ٹیم تشکیل دیکر ملزمان کی گرفتاری آلہ قتل کی برآمد گی اصل حقائق سامنے لانے کاہدف دیا ۔تفتشی ٹیم نے اس اندھے قتل کا ہر زاوئیے سے باریک بینی سے جدید خطوط پر استوار تفتیش سے جائزہ لیا گواہ چشم دید نرمین گل کو سر سری انٹارو گیٹ کیا گیا جس نے تمام حقائق اگل دئے اس نے بتایا کہ ہم محمد رحیم ،ولد عبدالقیوم ،خالد بعر ض چرانے بکرایا میرا اضاخیل گئے وہاں سے 17بکریاں چوری کر کے ساتھ پیدل لاراھے تھے کہ اس دوران محمد رحیم کے شلوار سے پستول گرگیا ۔جسے ہی پستول اٹھایااس سے فائرہوگیا جس سے عبدالقیوم لگ کر موقعے پر جان بحق ہوا۔ہم نے پولیس کو گمراہ کرنے کے لیے کہانی گھڑی۔اصل ملزم محمد رحیم افعانستان بھاگ گیا ۔جس کی گرفتاری کے لئے مطلقہ حکام سے رابطہ کیاگیا ہے گرفتاری جلد متوقع ہے ۔