بلوچستان: 2048 ءتک چینی شہریوں کی تعداد بلوچوں سے بڑھ جائیگی:رپورٹ

بلوچستان: 2048 ءتک چینی شہریوں کی تعداد بلوچوں سے بڑھ جائیگی:رپورٹ
بلوچستان: 2048 ءتک چینی شہریوں کی تعداد بلوچوں سے بڑھ جائیگی:رپورٹ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ویب ڈیسک) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ سی پیک کی تکمیل کے بعد 2048ءتک بلوچستان میں چینی شہریوں کی تعداد مقامی بلوچ قوم سے بڑھ جائیگی۔

چیمبرز کے صدر عبدالرﺅف عالم نے پریس کانفرنس میں کہا کہ حکومت کو بلوچ قوم کے خدشات دور کرنے چاہئیں۔ بلوچ قوم کا اہم خدشہ جغرافیائی تبدیلی کے حوالے سے ہے۔ حکومت بلوچ نوجوانوں کو تکنیکی تربیت دے تاکہ وہ ملازمت حاصل کرسکیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بہت زیادہ تعداد میں چینیوں کی آمد سے پاکستان کے دیگر حصے بھی متاثر ہوں گے۔ سی پیک کی تکمیل کے بعد ہر سال 6لاکھ سے زائد چینی پاکستان آئیں گے۔ اس وقت بلوچستان میں 55فیصد آبادی بلوچوں کی ہے۔

راحیل شریف اس وقت سعودی عرب میں کیا کر رہے ہیں اور واپس کب آئیں گے ؟سعودی عرب کی جانب سے پیشکش کے بعد مزید ہنگامہ خیز تفصیلات سامنے آگئیں

رپورٹ کے مطابق ایف ٹی اے کے باعث پاکستان اور چین کے درمیان تجارتی خسارہ 9ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے جوکہ 2002-03ءکے دوران صرف ایک ارب ڈالر تھا۔ چینی سرمایہ کاروں کو سہولتیں فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستانی سرمایہ کاروں کو نظر انداز نہیں کرنا چاہیے۔ پاکستانی تاجروں کو بھی وہی سہولتیں دی جائیں جو چینی تاجروں کو دی جارہی ہیں۔

مزید :

اسلام آباد -