صاف پانی کمپنی، لاہور میٹ کمپنی سمیت پنجاب کی پبلک سیکٹر کمپنیوں کی تشکیل کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا

صاف پانی کمپنی، لاہور میٹ کمپنی سمیت پنجاب کی پبلک سیکٹر کمپنیوں کی تشکیل کو ...
صاف پانی کمپنی، لاہور میٹ کمپنی سمیت پنجاب کی پبلک سیکٹر کمپنیوں کی تشکیل کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگارخصوصی )صاف پانی کمپنی، لاہور میٹ کمپنی سمیت پنجاب کی پبلک سیکٹر کمپنیوں کی تشکیل کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے۔یہ درخواست شیراز ذکاءایڈووکیٹ کی طرف سے دائر کی گئی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ صاف پانی کمپنی، لاہور میٹ کمپنی، ایگریکلچر کمپنی اور لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنیوں کو کمپنیز آرڈیننس کے تحت بنایا گیا ہے.

قانون کے مطابق کمپنیز آرڈیننس کے تحت صرف وفاقی حکومت کو پبلک سیکٹر کمپنیاں بنانے کا اختیار ہے، صوبے کو کمپنیز آرڈیننس کے تحت پبلک سیکٹر کمپنیاں بنانے کا اختیار نہیں ہے، درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ پبلک سیکٹر کمپنیاں جو فرائض سرانجام دے رہی ہیں، آئین کے آرٹیکل 140(اے )کے تحت وہ فرائض سرانجام دینا لوکل گورنمنٹ کی ذمہ داری ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ پبلک سیکٹر کمپنیوں کو غیرقانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے۔

مزید :

لاہور -