اردوزبان کو پس پشت ڈال کرترقی نا ممکن ہے،ذکر اللہ مجاہد

  اردوزبان کو پس پشت ڈال کرترقی نا ممکن ہے،ذکر اللہ مجاہد

  



لاہور (پ ر)امیر جماعت اسلامی لاہورڈاکٹر ذکراللہ مجاہدنے کہا ہے کہ قومی زبان اردو کو پس پشت ڈال کر ملک و قوم کو ترقی کی راہ پر گامزن نہیں کیا جا سکتا۔وزیر اعظم پاکستان اپنے وعدے کے مطابق ملک میں یکساں نصاب تعلیم کو رائج کرنے کیلئے اقدامات کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں نفاذ اردو کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔۔ ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ دنیا بھر میں جن ممالک نے ترقی کی ہے انہوں نے اپنی قومی زبان کو تعلیمی اداروں سمیت سرکاری و نجی اداروں میں قومی سطح پر رائج کیا مگر ہماری بدقسمتی ہے کہ ہمارے ملک میں پانچ سے زائد نصاب پڑھائے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک و قوم کے روشن مستقبل کیلئے ہمیں بحیثیت قوم مل کر نفاذ اردو کیلئے کمر بستہ ہو کر جدوجہد کرنی ہو گی۔ انگریز ی سمیت دیگر نظام تعلیم نے معاشرے میں طبقات پیدا کئے ہیں یہی وجہ ہے کہ امیر اور غریب میں تفریق بڑھتی چلی جارہی ہے اور نظام تعلیم کئی حصوں میں بٹ گیاہے۔

انہوں نے کہا کہ صرف یکساں نظام تعلیم ہی ملکی ترقی کا باعث بن سکتی ہے اس لئے ملک میں ایک جیسا نظام تعلیم ہونا وقت کی اہم ضرورت بن چکا ہے۔ دنیا میں انہیں ممالک اور معاشروں نے ترقی کی ہے جنہوں نے یکساں نظام تعلیم کی حقیقت کو جانا اور اس پر عمل پیرا ہوئے۔یورپ اور چین کی مثالیں ہمارے سامنے ہیں۔المیہ یہ ہے کہ ملک کا وزیر اعظم بھی یہ کہہ رہا ہے یکساں نصاب تعلیم ہونا چاہیے لیکن وہ کون سی قوتیں ہیں جو یکساں نصاب تعلیم سے وزیر اعظم کو روک رہی ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...