فورٹ عباس،گوجرانوالا میں ٹریفک حادثات، 13مسافر جاں بحق، درجنوں زخمی

فورٹ عباس،گوجرانوالا میں ٹریفک حادثات، 13مسافر جاں بحق، درجنوں زخمی

  



گوجرانوالہ،فورٹ عباس،عارفوالا (بیورو رپورٹ  تحصیل رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں)  پنجاب کے مختلف شہروں میں دھند اور تیز رفتاری کے باعث ٹریفک حادثات میں 12 افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق فورٹ عباس سے لاہو ر جانیوالی مسافر کوچ شدید دھند میں تیز رفتاری کے باعث موڑ کاٹتے ہوئے درخت سے جا ٹکرائی۔ خواتین سمیت7افراد جاں بحق 20 شدید زخمی ہوگئے،4شدید زخمیوں کو وکٹوریہ ہسپتال بہاولپورریفر کر دیا گیا۔ ہلاکتوں کی تعداد بڑھنے کا خطرہ۔ انتظامیہ کی بے حسی کوئی افسر موقع پر نہ پہنچ سکا۔ہارون آ باد اور فورٹ عباس کی انتظامیہ حدود کا تعین کرتی رہی۔ زخمیوں کی چیخ و پکار قیامت صغریٰ کا منظر رہا۔ تفصیلات کے مطابق فورٹ عباس سے لاہو ر جانے والی نعیم کوچ کی بس 174/7R موڑ نزد پٹرولنگ پولیس پوسٹ لطیف آبادتقریباً 9:30 بجے صبح شدید دھند کی وجہ سے موڑ کاٹتے ہوئے حادثہ کا شکار ہو گئی۔ مقا می افراد نے اپنی مدد آ پ کے تحت بس کے شیشے توڑ کر زخمیوں اورلاشوں کو باہر نکالا۔بعد ازاں ہارون آباد اور فورٹ عباس کی ایمو لینس نے نعشوں اور زخمیوں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پہنچا یا۔زخمیوں کی زیادہ تعداد کے پیش نظر نزدیکی ہسپتال میں داخل کروایا گیا۔مجموعی طور پر خواتین،بچوں سمیت7 افراد جاں بحق ہوئے۔ 4شدید زخمیوں محمد یونس ولد علی محمد،اللہ دتہ ولد رحمت علی،نسرین ولد عبدالطیف،صباء صدیق ولد محمد صدیق، کو بہاولپور وکٹوریہ ہسپتال ریفر کر دیا گیا۔ ہلاکتوں کی تعداد زیادہ ہونے کا بھی خطرہ۔ نازیہ بی بی سکنہ 215/9R،انیلا یونس  306/HR،محمد ہاشم سکنہ 306/HR،اقرا ء سکنہ 281/HR،محمد ندیم سکنہ 285/HR عبدالرحمن، شازیہ بی بی اورسفیا ن رحمانی چک نمبر319مروٹ جاں بحق ہوگئے۔ دوسری طرفگوجرانوالہ کے نواحی علاقہ میں تیزرفتارڈمپرنے موٹرسائیکل سوارتین محنت کشوں کوکچل کرہلاک کردیا بتایاجاتا ہے کہ لدھیوالا وڑائچ کے رہائشی 25سالہ حبیب الرحمن‘ 15سالہ دلاوراور16سالہ محمدنواز کام پرجانے کیلئے موٹرسائیکل پرسوارہوکر شہر کی طرف آرہے تھے کہ درباربھولے شاہ کے قریب چاندگاڑی سے ان کی ٹکر ہوگئی جس کے نتیجہ میں وہ تینوں موٹرسائیکل سے گرپڑے اوراسی اثناء میں پیچھے سے آنے والے تیزرفتارڈمپر نے انہیں کچل ڈالاجس سے وہ تینوں موقعہ پرہی پردم توڑ گئے تھانہ لدھیوالا پولیس نے نعشوں کوقبضے میں لے کر ضروری کارروائی شروع کردی ہے۔عارفوالا بہاولنگر روڑ پر مخالف سمت سے آنے والے تیزرفتار ٹرک نمبر 8286/SL نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں زبیاں بی بی زوجہ محمد اقبال،دریاں بی بی دختر رمضان وینس اور جنت بی بی زوجہ سمیع اللہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقعہ پر جاں بحق ہوگئیں جبکہ محمد اقبال، علی شیر لکھوکا، شمعون وینس،ساجد اقبال،سلمی ٰ بی بی اوربہادر شیر زخمی ہوگئے ریسکیواہلکاروں نے تینوں خواتین کی ڈیڈباڈیز اور زخمیوں کو طبی امدادکیلئے ہسپتال پہنچادیا تینوں خواتین کی آبائی گاؤں میں لاشیں پہنچنے پر کہرام برپا ہوگیا ہرآنکھ اشکبار ہوگئی۔

ٹریفک حادثات

 اسلام آبادلاہور(نیوزایجنسیاں)محکمہ موسمیات نے کہاہے کہ پنجاب اور بالائی سندھ کے بیشتر میدانی علاقوں میں شدید دھند پڑنے کا امکان ہے۔ تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا کے بعض اضلاع میں آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دور ان رات اور صبح کے وقت شدید دھند چھائے رہنے کی توقع ہے، بالائی علاقوں میں موسم شدید سرد رہے گا۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں گزشتہ تین دن سے دھند پڑنے کا سلسلہ جاری ہے جو اتوار تک رہے گا۔ ہفتے کی صبح شہر کا درجہ حرارت 6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو زیادہ سے زیادہ 15 تک جا سکتا ہے۔پنجاب کے میدانی اضلاع لاہور، گوجرانوالہ، گجرات، نارووال، سرگودھا، منڈی بہاوالدین، سیالکوٹ، حافظ آباد، ٹوبہ ٹیک سنگھ، جھنگ، فیصل آباد، اوکاڑہ، ساہیوال، ملتان، بہاولپور، بہاولنگر، ڈیرہ غازی خان اور راجن پور سے شدید دھند پڑنے کی اطلاعات ہیں،محکمہ موسمیات کے مطابق خیبرپختونخوا کے میدانی علاقوں ڈیرہ اسماعیل خان، لکی مروت، کرک، صوابی، نوشہرہ، پشاور، چارسدہ اور مردان میں دھند پڑ سکتی ہے، موسم خشک اور شدید سرد ر ہے گا۔سب سے زیادہ سردی اسکردو میں پڑی جہاں کا درجہ حرارت منفی 18 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ استور منفی 12، گوپس منفی11، بگروٹ منفی 9، گلگت، ہنزہ منفی 7، قلات منفی 6، کالام منفی 5 اور پاراچنار میں منفی 4ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ اسلام آباد کے نئے انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر پروازوں کی آمد ورفت شدید متاثر رہی،،اندورن و بیرون ملک آنے والی پروازوں کوپشاور اور لاہور بھجوایا جاتا رہا۔ ترجمان پی آئی اے کے مطابق نیو اسلام آباد ائیرپورٹ جدید لینڈنگ سسٹم نہ ہونے کے باعث صرف بڑے جہازوں کے لئے کارآمد ہے۔ شدید دھند کے باعث مسافر ٹرینیں غیر معمولی تاخیر کا شکار رہیں۔لاہور سے کراچی روانہ ہونے والی قراقرم ایکسپریس ساڑھے پانچ گھنٹے،لاہور سے کراچی جانے والی پاک بزنس ایکسپریس ساڑھے سات گھنٹے،لاہور سے کراچی جانے والی کراچی ایکسپریس ڈیڑھ گھنٹہ جبکہ فیصل آباد سے کراچی جانے والی ملت ایکسپریس تین گھنٹے 40منٹ تاخیر کاشکاررہی۔ اسی طرح دوسرے شہروں سے لاہور آنے والی  مسافر ٹرینیں بھی گھنٹوں تاخیر کا شکار رہیں۔

موسم،دھند

مزید : صفحہ اول