نئی ترامیم میں کیسز کیلئے 5 سوملین کی حد کا کہیں ذکر نہیں، فیاض چوہان

نئی ترامیم میں کیسز کیلئے 5 سوملین کی حد کا کہیں ذکر نہیں، فیاض چوہان

  



لاہور(فلم رپورٹر) وزیرِ اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ نیب آرڈیننس میں ترمیم پر تنقید سے پہلے مریم اورنگزیب کو ترمیم شدہ آرڈیننس کا اردو ترجمہ پڑھ لینا چاہیے تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیشہ کی طرح اس دفعہ بھی ن لیگی رہنماؤں کو قانونی دستاویزات کی انگریزی سمجھ میں نہیں آ رہی اور وہ عوامی و کاروباری حلقوں کی بہتری کیلئے بنائے گئے آرڈیننس پر بے بنیاد تنقید کر رہے ہیں۔ انہوں نے نیب آرڈیننس میں ترمیم پر اپوزیشن کی جانب سے بے جا تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ ترمیم سے کاروباری حلقوں کا سسٹم پر اعتماد مضبوط ہو گا۔ انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ نئی ترامیم میں کیسز کے لیے 500 ملین کی حد کا کہیں ذکر نہیں ہے اور نہ ہی ثبوت نہ ملنے کے باعث تین ماہ کے بعد ضمانت کی شق رکھی گئی ہے۔ فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ نئی ترمیم میں بیوروکریسی اور کاروباری افراد کو کہیں بھی مکمل چھوٹ نہیں دی گئی اور قانونی و مالی بے ضابطگی سامنے آنے پر ان کے خلاف بھی تادیبی کاروائی کی شق موجود ہے۔ فیاض الحسن چوہان نے اپوزیشن کو تنبیہہ کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن عوام کو گمراہ کرنے سے باز رہے اور قانون کی غلط تشریح کرنے میں اپنا وقت ضائع نہ کرے۔

فیاض الحسن چوہان

مزید : صفحہ اول