مرید کے، گائنی وارڈ میں ایمر جنسی مریضوں کا داخلہ ممنوع، خاتون نے لیبر روم کے باہر بچے کو جنم دیدیا

      مرید کے، گائنی وارڈ میں ایمر جنسی مریضوں کا داخلہ ممنوع، خاتون نے لیبر ...

  



مریدکے(نامہ نگار)تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتال مریدکے کے گائینی وارڈ میں ایمر جنسی مریضوں کا داخلہ ممنوع قرار دے دیا گیا۔عملہ طر ف سے حاملہ خاتون کولاہور لیجانے کے حکم کے بعد متاثرہ خاتون نے لیبر روم کے باہر ہی بچے کو جنم دے دیا۔ عملہ نے افراتفری میں زچہ اور بچہ کو منت سماجت کرکے گھر بھیج دیا۔ بتایا گیا ہے کہ سحرش زوجہ گل مست خان نامی خاتون رات کے پچھلے پہر ایمر جنسی طور پر ڈلیوری کے سلسلہ میں تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتال مریدکے لائی گئی مگر گائنی وارڈ کے عملہ نے اسے ٹریٹمنٹ دینے سے انکار کرتے ہوئے لاہور لیجانے کا حکم صادر کر دیا۔ متاثرہ خاتون نے لیبر روم سے باہرنکلتے ہی بچے کو جنم دے دیا جس پرہسپتال میں افراتفری مچ گئی اور عملہ نے معاملہ کو فوری طور پر سمیٹتے ہوئے ابتدائی طبی امداد دے کر منت سماجت کے بعد مریضہ کو گھر روانہ کر دیا۔ بتایا گیا ہے کہ ہسپتال انتظامیہ نے صرف پہلے سے رجسٹرڈ شدہ مریضوں کو ہی ڈلیوری کیسز کے لیے ہسپتال آنے کا خود ساختہ قانون لاگو کر رکھا ہے جس کے باعث دیگر مریضوں کو لاہور جانے کا حکم جاری کر دیا جاتا ہے۔ ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ نے معاملہ کی چھان بین کرکے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

بچے کوجنم

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...