خواتین معاشرے کی فلاح وترقی میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں: محمود خان

خواتین معاشرے کی فلاح وترقی میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں: محمود خان

  



پشاور(سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ خواتین کسی بھی معاشرے کی فلاح وتر قی میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں۔پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے اپنے منشور کے تحت خواتین کی فلاح و بہتری کیلئے نظر آنے والے اقدامات کئے ہیں۔ خصوصی طور پر شعبہ تعلیم اور صنعت و تجارت میں مجموعی ترقیاتی حکمت عملی میں خواتین کی تعلیم و تربیت اور روزگار کے مواقع پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔ صوبے میں ویمن یونیورسٹی صوابی اور کیڈٹ کالج برائے خواتین کا قیام حکومت کی سنجیدگی کا منہ بولتا ثبوت ہے، جو پاکستان میں اپنی نوعیت کا پہلا اور منفرد ادارہ ہے۔ ہم خواتین کو معاشرے میں سازگار اور پرامن ماحول دینے کیلئے کوشاں ہیں تاکہ وہ اپنی صلاحیتوں کے مطابق معاشرے کی بہتری کیلئے تعمیری کردار ادا کرنے کیلئے دلیری کے ساتھ آگے بڑھ سکیں۔ ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں خواتین اراکین صوبائی اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہماری خواتین ہمیشہ سے قومی ترقی اور خوشحالی کے مشن میں مردوں کے شانہ بشانہ کھڑی رہی ہیں۔ کوئی بھی قوم کامیابی کی بلندیوں تک نہیں پہنچ سکتی جب تک ترقی کے عمل میں اس کی خواتین کا کردار شامل نہ ہو۔محمود خان نے کہا کہ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے صوبے میں حکمرانی کا ایسا نظام متعارف کر ایا ہے جس میں معاشرے کے ہر طبقے کو ترقی کے یکساں مواقع حاصل ہیں۔اداروں میں سیاسی مداخلت کا خاتمہ کیا گیا ہے تاکہ قابل اور اہل مردو خواتین آگے آسکیں اور صوبے کی ترقی و خوشحالی میں اپنا کردار ادا کر سکیں۔ اُنہوں نے واضح کیا کہ صوبے میں سرمایہ کاری اور صنعتکاری کے فروغ کیلئے قابل عمل منصوبہ بندی کی گئی ہے۔خواتین تاجروں اور صنعتکاروں کو بھی سرمایہ کاری کے مواقع خصوصاً سی پیک سے استفادہ کرنے کا موقع دینے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ صوبائی صنعتی پالیسی تشکیل دی گئی ہے جس کے تحت صنعتکاروں کو بہترین سہولیات میسر ہوں گی۔اُنہوں نے اس موقع پر خواتین کی تعلیم و تربیت کی ضرورت اور اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ایک متوازن اور خوشحال معاشرے کے قیام کیلئے خواتین کی تعلیم کا فروغ نہایت ناگزیر ہے۔ اس کے بغیر معاشرتی ترقی کا تصور بھی ممکن نہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت خواتین کی معیاری تعلیم کیلئے بھی اقدامات کر رہی ہے۔ اس مقصد کیلئے ابتدائی و ثانوی تعلیمی اداروں سمیت کالجز اور یونیورسٹیوں میں خواتین کی تعلیم پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ محمود خان نے کہا کہ وہ صوبے میں خواتین کی ترقی کیلئے ویمن پارلیمنٹرینز کی تجاویز کو خوش آمدید کہیں گے۔

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائز کرنے کے عمل میں سست روی پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے منصوبے کے پہلے فیز کو جون 2020تک ہرصورت مکمل کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ بورڈ آف ریونیو خیبر پختونخوا کی جانب سے مالی سال کی پہلی سہہ ماہی سے متعلق اپنی رپورٹ پیش کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کو بتایا گیا کہ 5منصوبوں کیلئے مجموعی طور پر 48کروڑ90لاکھ روپے منظور کئے گئے ہیں تاہم اب تک صرف اور صرف 20لاکھ روپے ہی خرچ کئے جا سکے ہیں مانیٹرنگ اینڈ ایوالوایشن کی جانب سے 4رپورٹس کی گئی جن میں تین پر تاحال جواب بھی جمع نہیں کرایا جا سکا ہے جبکہ قبائلی اضلاع کیلئے 40کروڑ روپے کی لاگت سے واحد منصوبہ پر بھی عمل درآمد شروع نہیں کیا جا سکا ہے اجلاس کے دوران بورڈ آف ریونیو کی کارکردگی پر وزیر اعلیٰ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ترقیاتی منصوبوں پر کام میں تیزی لانے کی ہدایت کردی جبکہ صوبہ بھر کے لینڈ ریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن کے پہلے فیز کو جون 2020تک ہر صورت مکمل کرنے کا حکم بھی جاری کر دیااسی طرح اجلاس کے دوران لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم منصوبے کو مؤخر کرنے کی تجویز بھی پیش کی گئی جبکہ قبائلی اضلاع میں اراضی سے متعلق مسائل حل کرنے کیلئے بورڈ آف ریونیو کو قبائلی اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کے ساتھ اجلاس منعقد کرنے کی ہدایت کردی۔

مزید : صفحہ اول


loading...