منشیات فروش حسیناﺅں کا نیٹ ورک پکڑا گیا

منشیات فروش حسیناﺅں کا نیٹ ورک پکڑا گیا
منشیات فروش حسیناﺅں کا نیٹ ورک پکڑا گیا

  



کراچی (ویب ڈیسک) کراچی کے علاقے ملیر میں بول نیوز نے اسٹنگ آپریشن کرتے ہوئے خواتین منشیات فروشوں کے نیٹ ورک کو بے نقاب کردیا، پورا نیٹ ورک ایک خاتون چلا رہی ہے۔

تفصیلات کےمطابق کراچی کے ضلع ملیر کے علاقے غریب آباد گوٹھ میں خواتین منشیات فروشوں کا نیٹ ورک پکڑتے ہوئے ان کی تصاویر بھی حاصل کرلی ہیں۔

بول نیوزاپنے سٹنگ آپریشن میں دکھا رہا ہے کہ کس طرح ایک پورے گوٹھ پر خواتین منشیات فروشوں کا راج قائم ہے۔ ملیر سٹی تھانے کی حدود میں منشیات فروشوں کی سرغنہ شمع عرف شیمو نامی عورت ہے اور اس کی سرپرستی میں غریب آباد گوٹھ میں شریفہ، سکینہ ، آمنہ اور کلثوم منشیات بکوارہی ہیں۔ ان کے ساتھ اسی گوٹھ کی جمیلہ، کنچی، ون ٹین اور چلی نامی خواتین بھی منشیات بکوارہی ہیں۔

سرِ عام بکتی اس منشیات فروشی پر پولیس نے پراسرار خاموشی اختیار کی ہوئی ہے ، ذرائع کا کہنا ہے کہ گوٹھ میں موجود منشیات مافیا سے مبینہ طور پولیس رشوت لیتی ہے۔

ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ ملیر سٹی تھانے میں طویل عرصے سے تعینات اہلکار ذیشان مبینہ رشوت وصول کرتا ہے۔ گوٹھ میں ہیروئن، آئس، چرس اورگردہ سرعام دستیاب ہے۔

خواتین منشات فروشوں کے ڈیلر کی سنسنی خیز ریکارڈنگ بول نیوز نے حاصل کرلی۔ فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بڑی تعداد میں منشیات کے عادی افراد ہیروئن خرید رہے ہیں۔ یہی نہیں بلکہ نشہ کرنے والے افراد بھی گوٹھ کی حدود میں کھلے عام بیٹھ کر نشہ کرتے ہیں۔

ملیر سٹی اور غریب آباد گوٹھ کے گرد و نواح میں رہنے والے مکینوں کا حکومت اور پولیس سے مطالبہ ہے کہ ان کی حدود میں موجود اس گھناﺅ نے نیٹ ورک کا قلع قمع کیا جائے ، یہ نیٹ ورک ان کی نسلوں کو منشیات کے ذریعے تباہ کررہا ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی