شیخوپورہ کے ہسپتال میں بچے کی پیدائش کے دوران خواتین کی نازیبا ویڈیوز بنانے والی نرس گرفتار لیکن یہ کام کس کے کہنے پر کرتھی ؟ خوفناک انکشاف

شیخوپورہ کے ہسپتال میں بچے کی پیدائش کے دوران خواتین کی نازیبا ویڈیوز بنانے ...
شیخوپورہ کے ہسپتال میں بچے کی پیدائش کے دوران خواتین کی نازیبا ویڈیوز بنانے والی نرس گرفتار لیکن یہ کام کس کے کہنے پر کرتھی ؟ خوفناک انکشاف

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )شیخو پورہ کے ہسپتال میں زچگی کے دوران خواتین کی نازیبا ویڈیوز بنانے والی درندہ صفت ملزمہ کو پولیس نے گرفتار کر کے کارروائی کا آغاز کر دیاہے اور اب اس کا اقبالی بیان بھی سامنے آ گیاہے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق شیخوپورہ میں واقع سنبل ہسپتال میں نازیبا ویڈیو ز بنانے والی ملزمہ طاہرہ نے اقبال جرم کر لیاہے اور اس کا بیان بھی سامنے آ گیاہے جس میں اس کا کہناتھا کہ وہ ملزم زمان ڈوگر کے کہنے پر یہ ویڈیوز بناتی تھی جوکہ اسے بلیک میل کرتا تھا ۔پولیس نے ملزم زمان ڈوگر کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارنا شروع کر دیئے ہیں جبکہ ملزمہ عرصہ دراز سے اس گھناﺅنے کام میں ملوث تھی ۔

ہسپتال کے مالک سرفراز کا کہناہے کہ مجھے جب اس کارروائی کا پتا چلا اور اس ویڈیو کو میں نے ان سے لے کر انتظامیہ کو دی اور مقدمہ درج کروایا ۔خاتون نے اپنے بیان میں کہا کہ ” میں نے یہ ویڈیوز اپنے دوست کے کہنے پر بنائی تھیں کیونکہ اس کے پاس میری قابل اعتراض تصاویر تھیں اور وہ مجھے بلیک میل کرتا تھا ۔ میرے دوست نے مجھے مجبور کیا کہ ویڈیوز بناﺅ اور ہم ہسپتال انتظامیہ کو بلیک میل کر کے پیسے بٹورتے ہیں اور ایسا کرنا میری مجبوری بن گئی تھی ۔اقبالی بیان کے دوران نرس طاہرہ نے روتے ہوئے ہاتھ جوڑ کر معافی مانگی اور کہا کہ میں نے بہت بڑی غلطی کی ہے۔بہت بڑا گناہ کیا ہے میں اللہ سے بھی معافی مانگتی ہوں۔ میں بہت مجبور تھی۔ اپنی عزت بچاتے بچاتے یہ گھناو¿نا کام کرگئی۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /شیخوپورہ