نئی تاریخ رقم ہوگئی، خواجہ سرا میاں بیوی کے ہاں بچے کی پیدائش، ڈلیوری کرنے والا ڈاکٹر بھی خواجہ سرا

نئی تاریخ رقم ہوگئی، خواجہ سرا میاں بیوی کے ہاں بچے کی پیدائش، ڈلیوری کرنے ...
نئی تاریخ رقم ہوگئی، خواجہ سرا میاں بیوی کے ہاں بچے کی پیدائش، ڈلیوری کرنے والا ڈاکٹر بھی خواجہ سرا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خواجہ سراءجوڑے نے بچے کو جنم دے دیا، جس کے لیے سپرمز بھی ایک خواجہ سراءنے عطیہ کیے اور ان سپرمز کے ذریعے بچہ پیدا کرنے کا مرحلہ بھی ایک خواجہ سراءڈاکٹر کے ہاتھوں طے پایا۔ میل آن لائن کے مطابق 39سالہ ریوبین شارپ اور اس نے 27سالہ پارٹنرجے کا تعلق برطانوی شہر برائٹن سے ہے۔ ریوبین پیدائشی طور پر عورت تھی تاہم 12سال قبل اس نے جنس تبدیل کرالی اور مرد بن گئی۔ چند سال اس کی ملاقات جے سے ہوئی جو خود ایک خواجہ سرا ءتھا تاہم وہ خود کو نہ مرد کہتا ہے نہ عورت سمجھتا ہے۔

ریوبین اور جے نے ایک سال قبل بچہ پیدا کرنے کا فیصلہ کیا اور فیس بک کے ذریعے سپرمز حاصل کرنے کی اپیل کی۔ اس اپیل کے جواب میں ایک خواجہ سرائ، جو مرد سے عورت بنا تھا، نے انہیں سپرمز عطیہ کر دیئے جو ایک خواجہ سراءڈاکٹر نے براہ راست ریوبین کے رحم میں انجیکٹ کر دیئے اور وہ حاملہ ہو گئی۔ اب ان کے ہاں صحت مند بچے کی پیدائش ہو گئی ہے۔ بچے کی پیدائش پر ریوبین کا کہنا تھا کہ ”اب میں سمجھتی ہوں کہ ہم مکمل ہوگئے ہیں۔ بچہ پیدا کرنے کے لیے حاملہ ہونے سے 6ماہ قبل مردانہ جنسی ہارمون ٹیسٹاسٹرون کے انجکشن لینے بند کر دیئے تھے تاکہ میں حاملہ ہو سکوں۔ بچے کی پیدائش پر میرے اور جے کے گھر والے بھی بہت خوش ہیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...