حکمرانوں نے پورے ملک کو کو مالیا تی اداروں کے پاس گروی رکھ دیا: اجمل بلوچ

حکمرانوں نے پورے ملک کو کو مالیا تی اداروں کے پاس گروی رکھ دیا: اجمل بلوچ

  



تخت بھائی (نما ئندہ پاکستان) نااہل حکمرانوں نے 40 لاکھ تاجروں اور 22 کروڑ عوام کو آئی ایم ایف اور دیگر بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے پاس گروی رکھ دیا ہے۔ایک تھیلے والا دوکاندار جیل میں اور لاکھوں تھیلے ذخیرہ اندوزی کرنے والے آزاد گھوم کر تاجروں کا مزاق اڑا رہے ہیں۔اگر تاجر طبقے کے خلاف ملک بھر میں بیجا پکڑ دھکڑ کاسلسلہ بند نہ کیا تو ملک بھر کے تاجر ریڈ زون اسلام آباد میں داخل ہوکر بھرپور احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔جس سے ٹیکسوں کی بھرمار حکومت کو منہ توڑجواب ملے گا۔ ان خیا لات کا اظہار آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی صدر اجمل بلوچ، چیئر مین خواجہ محمدشفیق، صوبائی صدر ملک مہر الہی، صوبائی جنرل سیکرٹری احسان اللہ باچہ، مرکزی انجمن تاجران تحصیل تخت بھائی کے صدر حاجی معزاللہ خان، جنرل سیکرٹری حاجی شیر قیوم مست خیل،سٹی صدر موسیٰ خان اور جنرل سیکرٹری سید قیوم سدا مرکزی انجمن تاجران تحصیل تخت بھائی کے زیر اہتمام مینا بازار میں عظیم الشان تحفظ تاجر کنونشن سے خطاب کررہے تھے۔انھوں نے کہا کہ کاروبار اھم پیغمبری پیشہ ہے اورتاجر طبقہ ملک کی معیشت میں اھم پہیے کی حیثیت رکھتا ہے۔اسکو نظر انداز اور پریشان کرنے سے ملک کی ترقی کا پہیہ جام ہو جائیگا۔خطرناک مہنگائی کا زیادہ تر اثر غریب طبقے پر پڑھ کر تاجروں کو کاروبار چھوڑنے پر مجبور کیا جارہا ہے۔حکمران اور انتظامیہ مہنگائی کنٹرول کرنے میں ناکام ہوکر زیادہ تر غصہ تاجروں پر نکال کر اسے سڑکوں پر نکلنے پر مجبورکررہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ آے روز پکڑ دھکڑ اور دوکانوں کو سیل کرنے کی پالیسی حکومت کو مہنگی پڑیگی۔حکمران اپنا قبلہ درست کریں ورنہ پورے ملک میں احتجاج کا سلسلہ شروع ہوکر منطقی انجام تک پہنچا کر دم لینگے۔آئے روز ایکسائز و دیگر ٹیکسوں کی بھر مار پالیسی اور ایف بی آر کے مظالم ملک کے تاجروں کیلئے ناقابل برداشت ہے۔انھوں نے ملک بھر کے تاجروں سے متحد ہونے کی اپیل کردی۔اس موقع پرمنظور کردہ قراداد میں حکو مت سے مطا لبہ کیا گیا کہ بے جا ٹیکسوں اور نا رواں بجلی لوڈشیڈنگ کو فوری طور پر ختم کیا جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر