پارا چنار،خرلاچی پر تاجروں کی جانب سے پاک افغان تجارت بند

پارا چنار،خرلاچی پر تاجروں کی جانب سے پاک افغان تجارت بند

  



پاراچنار(نمائندہ پاکستان)پاک افغان سرحد خرلاچی پر تاجروں نے احتجاجا پاک افغان تجارت بند کردی ہے اور مطالبہ کررہے ہیں کہ انہیں گاڑیوں کی لوڈ انلوڈ کی اجازت این ایل سی کیمپ سے باہر دیا جائے خرلاچی سرحد پر پاک افغان شاہراہ کی بندش کے بعد احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے تاجر رہنماؤں حاجی زینت علی، سید مبین، زمرک خان، ناصر بنگش اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ خرلاچی بارڈر پر عرصہ دراز سے گاڑیوں کی لوڈ انلوڈنگ ہورہی تھی اور اب این ایل سی ٹرمینل کے اندر گاڑیوں کی لوڈ ان لوڈنگ کی احکامات دئیے گئے ہیں جس سے سینکڑوں مزدوروں اور تاجروں کی بے روزگاری کا خدشہ ہے لہذا این ایل سی ٹرمینل کے اندر گاڑیوں کی لوڈ انلوڈنگ کا فیصلہ واپس لیا جائے اور حسب سابق ٹرمینل سے باہر اجازت دی جائے تاکہ سینکڑوں مزدوروں تاجروں اور دیگر کاروباری لوگوں کو روزگار کے مواقع میسر ہو تاجروں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ خرلاچی بارڈر کو طورخم کی طرح تجارت کیلئے مزید فعال بنایا جائے اور یہاں گاڑیوں کی چیکنگ کیلئے سکینر لگائی جائے اور دیگر سہولیات فراہم کی جائے تاجروں نے خرلاچی کے مقام پر اپنے مطالبات کے حق میں احتجاجاً پاک افغان شاہراہ بند کردی ہے اور مین شاہراہ پر احتجاج کررہے ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر