کندہ کرک میں گیس کی تنصیب کیلئے 16 دیہات کے عوام کا احتجاج جاری

کندہ کرک میں گیس کی تنصیب کیلئے 16 دیہات کے عوام کا احتجاج جاری

  



کرک (بیورورپورٹ)کندہ کرک میں الگ گیس ایس ایم ایس کی تنصیب کیلئے 16دیہات کے عوام کا احتجاجی تحریک دوسرے روز میں داخل،پلان بی کے تحت 4مارچ بروز بدھ سوئی نادرن کے مقامی دفتر کے گھیرا کا اعلان،جملہ دیہات کی سطح پر بھر پور رابطہ عوام مہم شروع،مشران کو ذمہ داریاں حوالے کر دی گئیں۔اس حوالے سے کندہ اتحاد کے سپریم کونسل کا اجلاس حاجی گل شاہ جمیر کی سربراہی میں کندہ کرک میں منعقد ہوا جسمیں دیگر مشران صوبیدار (ر)ظہیر،سابق کونسلر ویال زمان،ولی مرخان،نیاز بادشاہ،رشید خان،حاجی گل محمدخوشدل خان،قلم بادشاہ،مولانا فضل جان،نعمت اللہ،وحید اللہ و دیگر نے شرکت کی اجلاس کے دوران علاقے کو گیس فراہمی کیلئے گنداو گیس ایس ایم ایس سے ہونے والی منصوبہ بندی مسترد کی گئی اور مشران نے تجاویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہر حال میں علاقے کیلئے الگ گیس ایس ایم ایس حاصل کرکے رہینگیجس کیلئے جیل ہتھکڑیاں پہننے کیلئے تیار ہیں اجلاس میں تحریک کے پلان بی کے مارچ کو سوئی نادرن کے مقامی دفتر کے گھیرا کا اعلان کیا گیا کندہ اتحاد کے چیئرمین قاری بدر الاسلام اور دیگر مشران نے مقامی میڈیا کو تحریک کے حوالے سے دیگر تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ کندہ،تپی کندہ،شگء،دبلی لواغر اور دیگر دیہات کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھا جا رہا ہے اور کہا کہ ہمیں لاقانونیت پر مجبور کیا گیا ہے اس سے پہلے علاقے کے دو یا تین دیہات کو گیس پائپ لائن بچھائی گئی مگر کسی نے بھی اس گیس سے چولہا نہیں جلایا اور اب دوبارہ گیس فراہمی منصوبے کیلئے منظور خطیر رقم کے باوجود ہمیں دوسرے علاقے سے گیس فراہمی کے نام پر ٹرخایا جا رہا ہے جو ہمیں کسی صورت منظور نہیں ان کا کہنا تھا کہ ہم نے تحریک کو ہر حال میں کامیاب بنانے کا تہیہ کر رکھا ہے اور خبردار کیا کہ اگر مطالبہ پورا نہ کیا گیا تو پلان سی اور ڈی کے اعلان پر مجبور ہونگے جس کی ذمہ داری سوئی نادرن کے متعلقہ حکام پر عائد ہوگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر