مردان میں 5 روز قبل لاپتہ بچی پر اسرار طور پر جاں بحق

مردان میں 5 روز قبل لاپتہ بچی پر اسرار طور پر جاں بحق

  



مردان (بیورورپورٹ)نواحی علاقہ گڑھی دولت زئی میں 5دن قبل لاپتہ ہونے والی 3سالہ بچی پراسرار طورپر جان بحق،لاش گھر کے قریب نالی سے ملی،واقعے کی تحقیقات کے لئے جے آئی ٹی تشکیل دے دی گئی،بدقسمت بچی کا والد پولیس کانسٹیبل ہے پولیس کے مطابق 3سالہ فاطمہ کی گمشدگی کی رپورٹ اس کے چچا شہزاد گل نے تھانہ گڑھی کپورہ میں درج کی تھی جس کے بعد پولیس اور لوگوں نے بچی کی تلاش شروع کردی پولیس کے مطابق جمعہ کی صبح بچی کی لاش گھر کے قریب ایک نالی سے ملی ورثاء نے لاش بالاگڑھی ہسپتال منتقل کردی متوفی بچی کے ورثاء نے الزام لگایاکہ ہسپتال کے ڈاکٹروں نے بچی کے پوسٹ مارٹم سے انکار کردیا جس پر ورثاء نے احتجاج کیا پوسٹ مارٹم نہ ہونے پربچی کو ایم ایم سی ہسپتال منتقل کردیاگیا جہاں پوسٹ مارٹم کے بعد لاش ورثاء کے حوالہ کردی گئی واقعے کے بعد ڈی پی او سجادخان ہسپتال پہنچ گئے اور واقعے کی تحقیقات کے لئے ایس پی انوسٹی گیشن کی سربراہی میں جے آئی ٹی تشکیل دے دی جو واقعے کی مختلف پہلو کا جائزہ لے گی ڈی پی او نے بتایاکہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد بچی کی پراسرار موت کے حوالے سے کچھ بتایاجاسکے گا انہوں نے کہاکہ بچی قتل کیس کے مختلف پہلو کا جائزہ لیاجارہاہے جو بھی اس میں ملوث پایاگیا وہ قانون کی گرفت سے بچ نہیں سکے گا بچی کا والد لائق زادہ محکمہ پولیس میں کانسٹیبل ہے دریں اثناء ڈی آئی جی مردان شیراکبرخان اور ڈی پی او سجادخان نے موقع واردات کا معائنہ کیا اور شواہد کا جائزہ لیا پولیس حکام نے ملزمان اور حقائق جلد ازجلد سامنے لانے کے احکامات جاری کردیئے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر