ٹرمپ کا بیان طفل تسلیوں کے سوا کچھ نہیں،حافظ عاکف سعید

ٹرمپ کا بیان طفل تسلیوں کے سوا کچھ نہیں،حافظ عاکف سعید

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر تنظیم اسلامی حافظ عاکف سعید نے امریکی صدر ٹرمپ کے اس بیان پر کہ وہ کشمیر کے معاملے میں ثالثی کا کردار ادا کرنے کے لیے تیارہیں اپنے ردّ عمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کابیان پاکستان کے لیے طفل تسلیوں کے سوا کچھ نہیں۔ ہمارے نزدیک ٹرمپ کی کشمیر پر ثالثی کی پیشکش ایک مکارانہ چال ہے۔ اِس سے پہلے وہ اس حوالے سے فلسطینیوں سے بھی دھوکہ کر چکے ہیں‘ لہٰذا ہمارے حکمرانوں کو ہوشیار اور محتاط رہنا ہوگا۔امیر تنظیم اسلامی نے کہا کہ پاکستان کا مسئلہ کشمیر پر ٹرمپ کی ثالثی کو قبول کرنا یو این او کی قراردادوں سے پیچھے ہٹنے کے بھی مترادف ہو گا۔اُنھوں نے مزید کہا کہ بھارت میں ”شہریت قانون“کے خلاف مسلمانوں سمیت تمام اقلیتیں طویل عرصے سے احتجاج کر رہی تھیں مگر امریکی صدر ٹرمپ کی آمد پر اس احتجاج کو کچلنے کے لیے مودی سرکار نے آر ایس ایس کے غنڈوں کو جلاؤ گھیراؤ اور قتل عام کی چھوٹ دے دی۔

پولیس اور دیگر فورسز نے مسلمانوں کو تحفظ دینے کی بجائے آر ایس ایس کا ساتھ دیا۔ مساجد و مدارس اوربستیوں کو جلایا گیا جبکہ مسلمانوں کو شہید اور زخمی کیا گیا۔ اُنھوں نے کہا کہ کرونا پوری دنیا کے لیے اللہ تعالیٰ کی جانب سے ایک وارننگ اور عذاب ہے۔ ضرورت اس اَمر کی ہے کہ ہم مسلمان میڈیکل سائنس کی جدید سہولیات اپنے تحفظ کے لیے استعمال تو ضرور کریں لیکن کرنے کا اصل کام یہ ہے کہ ہم نے اللہ اور رسولﷺ کے خلاف جو بغاوت برپا کر رکھی ہے اُ س سے باز آئیں اور رجوع الی اللہ کرتے ہوئے اپنے انفرادی اور اجتماعی گناہوں سے توبہ کریں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1