اسلام آباد کی بعض دکانوں پر توہین آمیز کتابیں فروخت ہونے کا انکشاف

  اسلام آباد کی بعض دکانوں پر توہین آمیز کتابیں فروخت ہونے کا انکشاف

  



اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی وزیر ہاوسنگ طارق بشیر چیمہ نے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور اجلاس میں اسلام آباد کے بعض بک سٹالز پر فروخت ہونے والی تین توہین آمیز کتابیں پیش کرتے ہو ئے کہا کہ ان کتابوں میں صحابہ کرام کی سنگین توہین کی گئی ہے،اراکین کمیٹی نے کہا کہ نبی اکرم ؐکے صحابہ کی توہین کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ چیئرمین قائمہ کمیٹی مولانا اسعد محمود نے کہاکہ توہین آمیز کتابیں فوری طورپر بک سٹالز سے اٹھائی جائیں جس نے توہین آمیز کتابیں درآمد کی ہیں یا فروخت کی ہیں ان کے خلاف ایکشن لیا جائے رکن قائمہ کمیٹی شگفتہ جمانی نے مطالبہ کیا کہ جس خاتون نے یہ توہین آمیز کتاب لکھی ہے اس ملک کے سفیر کو دفتر خارجہ میں طلب کرکے احتجاج کیا جائے۔ قائمہ کمیٹی نے سفارش کرتے ہوئے کہا کہ نبی اکرم ؐکے صحابہ کی توہین کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی،توہین آمیز کتابیں فوری طورپر بک سٹالز سے اٹھائی جائیں جس نے توہین آمیز کتابیں درآمد اور پھرفروخت کی ہیں ان کے خلاف ایکشن لیا جائے۔ اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے وزارت مذہبی امو رکے حکام نے کہا کہ ہم ختم نبوتؐ کا حلف نامہ نکالنے کا سوچ بھی نہیں سکتے چودہ صفحات کے فارم کو دو صفحات پر کرتے ہوئے ایک صفحے پر ختم نبوتؐ کا حلف نامہ رکھا گیا،سوشل میڈیا کے ردعمل پر ڈیٹا فارم اور دوسرے فارم میں بھی ختم نبوتؐ فارم ڈال دیا گیا ہے، چالیس ہزار حج فارم جمع ہوچکے ہیں سب میں ختم نبوت ؐکا حلف نامہ موجود ہے جس ایک صفحے پر سے ختم نبوت ؐحلف نامہ ہٹایا گیا تھا وہ بھی بحال کردیا گیا۔وفاقی وزیر مذہبی امورنے کمیٹی اجلاس کو بتایا کہ واضح کرنا چاہتا ہوں پہلے صفحے پر سے بھی ختم نبوتؐ کا حلف نامہ نکالتے ہوئے مجھے اعتماد میں نہیں لیا گیا،ساری زندگی ختم نبوتؐ کی وکالت کی میری ہی وزارت نے میرے علم میں لائے بغیر ختم نبوتؐ کا حلف نامہ نکال دیا۔ ایشو کھڑا ہونے پر مجھے حج فارم کے اختصار کی تکنیکی وجوہات کا بتایا گیا اب ختم نبوتؐ کا حلف نامہ دونوں فارموں پر موجود ہے۔پی پی رکن شگفتہ جمانی نے اجلاس میں حجاج کرام کی صدائے احتجاج کی ویڈیو دکھا دی۔جس پر وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری نے کہا محترمہ یہ ویڈیو پچھلے سال کے حج کی نہیں یہ پی پی کے دور 2009کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس کے مسئلے پر وزارت مذہبی امور سعودی حکومت سے بات کرے گی کرونا وائرس اور حج کے معاملے پر جو ہدایات سعودی حکومت دے گی اس پر عمل کرنا ہوگا۔ اجلاس میں وفاقی وزیر مذہبی امور کے علاوہ وزارت کے اعلی حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں جبری تبدیل مذہب کا بل ایک بار پھر موخرکر دیا گیا چیئرمین کمیٹی مولانا اسعد محمود نے کہاکہ یہ سنجیدہ معاملہ ہے پورے غور و خوض سے قانون بننا چاہئے۔

انکشاف

مزید : صفحہ آخر