شہری حدود میں شامل ہونیوالے علاقوں کوٹیکس نیٹ میں لانیکی تیاریاں

  شہری حدود میں شامل ہونیوالے علاقوں کوٹیکس نیٹ میں لانیکی تیاریاں

  



ملتان (نیوز رپورٹر) سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب کی ہدایت پر محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ملتان ریجن نے پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2019ء کے تحت حد بندی سے شہری حدود میں شامل کیئے جانیوالے علاقوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیئے محکمہ نے کمرشل و سکنی جائیدادوں کے سروے بارے پیپر ورک کا آغاز کردیا ہے ڈائریکٹر ایکسائز ملتان ریجن(بقیہ نمبر44صفحہ7پر)

عبداللہ خان جلبانی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے ملتان سمیت صوبہ بھر میں حد بندی سے میونسپل سروسز کے دائرہ کار میں آنیوالے متعدد علاقوں کو شہری حدود میں شامل کیا جاچکا ہے جبکہ ملتان ڈویڑن کے چاروں اضلاع ملتان، خانیوال، لودھراں اور وہاڑی کے متعدد علاقوں کو ٹاون کمیٹیوں میں شامل کیا گیا ہے ان میں کوٹ ربنواز، گل محمد والا، کوٹلہ گل فتح، دولت آباد، طرف اسماعیل، مخدوم پور پہوڑاں، گیلے وال، گوگراں، ٹبہ سلطان پور، جلہ جیم، کرم پور، مترو، ماچھی وال اور لڈن کے علاقے شامل ہیں اور جون 2020ء تک ان تمام علاقوں کی ٹیکس نیٹ میں رجسٹریشن کا عمل مکمل کرلیا جائے اور یکم جولائی سے ٹیکس وصولی کا آغاز کریں گے ڈائریکٹر ایکسائز نے کہا کہ ٹیکس نیٹ میں آنے سے علاقوں میں بنیادی سہولیات کی فراہمی سیت ترقیاتی کام کروائے جاسکیں گے انہوں نے بتایا کہ پراپرٹی ٹیکس کا 85 فیصد ریونیو انہیں علاقوں کی تعمیر و ترقیاتی منصوبوں تعلیمی ادارے، صحت سنٹرز، اور تفریحی پارکس سمیت دیگر عوامی منصوبوں پر خرچ کیا جاتا ہے تاکہ لوگوں کا معیار زندگی بہتر بنایا جاسکے۔

تیاریاں

مزید : ملتان صفحہ آخر