نشتر: مریضہ کی موت پر لواحقین کا ہنگامہ‘ توڑ پھوڑ‘ ڈاکٹر کو دھمکیاں

  نشتر: مریضہ کی موت پر لواحقین کا ہنگامہ‘ توڑ پھوڑ‘ ڈاکٹر کو دھمکیاں

  



ملتان ( کو رٹ رپورٹر ) نشتر ہسپتال میں مریضہ کی موت پر لواحقین نے ہنگامہ، توڑ پھوڑ برپا کردیا اور کی وارڈ 11 میں موجود لیڈی ڈاکٹر کو ہراساں کرتے رہے - ینگ ڈاکٹرز کی کوئیک ریسپانس فورس نے گارڈز کے ہمراہ پہنچ کر لیڈی ڈاکٹر کو بچایا - تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے سکیورٹی بل منظوری کے لئے اسمبلی میں پیش نہ کرنے(بقیہ نمبر36صفحہ12پر)

کے باعث سرکاری ہسپتالوں میں آئے روز ڈاکٹروں کے لواحقین کے ساتھ جھگڑوں میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے - گزشتہ روز رات گئے نشتر ہسپتال کے وارڈ 11 میں مریضہ کے جاں بحق ہونے پر احتجاج کرتے ہوئے وارڈ کے دروازے کے شیشے توڑ ڈالے گئے اور ڈیوٹی پر موجود خاتون ڈاکٹر کو ہراساں کرنا شروع کر دیا گیا - اطلاع ملنے پر ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کی کوئیک ریسپانس ٹیم وائی ڈی اے پنجاب کے چئیر مین ڈاکٹر خضر حیات کی قیادت میں فوری وارڈ میں پہنچی - اس موقع پر ڈاکٹر صہیب قدوس، ڈاکٹر عامر فرید اور ہسپتال کے گارڈز بھی ہمراہ تھے - جنہوں نے فوری طور پر لواحقین کو پکڑا اور چیف سیکیورٹی آفیسر کے دفتر لے گئے - جہاں ملزمان کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا - ادھر خواتین ڈاکٹرز نے پنجاب حکومت سے سکیورٹی بل جلد از جلد نافذ کرنے کا مطالبہ کیا ہے -

دھمکیاں

مزید : ملتان صفحہ آخر