شوگر ملز مالکان‘ انتظامیہ کو کاشتکاروں کے واجبات ادا کرنیکا حکم

  شوگر ملز مالکان‘ انتظامیہ کو کاشتکاروں کے واجبات ادا کرنیکا حکم

  



مظفرگڑھ(بیورو رپورٹ‘تحصیل رپورٹر) صوبائی مشیر برائے زراعت سردار عبدالحئی خان دستی نے کہا ہے کہ پاکستان کی معیشت شعبہ زراعت سے جڑی ہوئی ہے ملک کی ترقی کا دارومدار شعبہ زراعت سے وابستہ ہے اور کاشتکار شعبہ زراعت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں کاشتکاروں سے کسی قسم کی زیادتی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی یہ بات انہوں نے شوگر (بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

ملز اور کاشتکاروں کے نمائندگان کے ساتھ گنے کے کاشتکاروں کے واجبات کی ادئیگی کے سلسلے میں منعقدہ ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر فنانس اینڈ پلاننگ ان کے ہمراہ تھے،صوبائی مشیر نے کہا کہ تمام شوگر ملز گنے کے کاشتکاروں کے واجبات 15دن کے اندر ادا کریں تمام کاشتکاروں کی ادائیگی کو15دنوں میں یقینی بنایا جائے، اس سلسلے میں کسی قسم کی سستی یا گوتاہی کو برداشت نہیں کیا جائے گا، اجلاس میں ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت شیخ یوسف الرحمن نے کہا کہ کاشتکار گنے کی صرف منظور شدہ اقسام کاشت کریں تاکہ شوگرملز گنے پر کسی قسم کی کٹوتی نہ کرے اور اس سے گنے کی فصل بھی اچھی ہوگی اور فی ایکٹر پیداوار میں بھی اضافہ ہوگا اور کاشتکاروں کو بھی زیادہ سے زیادہ منافع حاصل ہوگا۔ صوبائی مشیر برائے زراعت سردار عبدالحئی خان دستی نے کہا ہے کہ شہریوں کو درپیش مسائل ان کی دہلیز پر پہنچ کر حل کرونگا۔سیوریج کے مسائل کے یقینی حل کے لئے متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے اور جلد ہی شہر کے اس درینہ مسئلہ کو حل کرنے کے لئے ذاتی دلچسپی سے مزید منصوبوں پر عملدرآمد شروع کردیا جائے گایہ بات انہو ں نے علاقہ مکنیوں کیجانب سے کی جانی سے کی جانے والی نشاہدہی پر ریلوئے اسٹیشن اور ملحقہ علاقوں میں سیوریج کے مسائل کا معائنہ کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ مجھے خوشی ہے شہریوں نے مجھے اپنے مسائل کے بارے آگاہ کیا میں اپنے شہر کی ہر ممکن بہتری کے لئے ہمہ وقت کوشاں ہوں۔اس موقع پر سابق صدر ڈسٹرکٹ بار مہر اعجاز اور سابق وائس چئیرمین یونین کونسل دین پور اعظم بھی انکے ہمراہ تھے، صوبائی مشیر نے سیوریج کے پانی کی نکاسی اور صفائی کے معاملات پر میونسپل کارپوریشن کے عملے کو فوری صفائی ستھرائی کے احکامات جاری کئے۔

حکم

مزید : ملتان صفحہ آخر