ضلع مظفر گڑھ‘ ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ‘ لوگوں پر خطرناک بیماریوں کا حملہ

  ضلع مظفر گڑھ‘ ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ‘ لوگوں پر خطرناک بیماریوں کا ...

  



چوک مکول (نامہ نگار) ضلع مظفرگڑھ میں 15لاکھ سے زائد لوگ افراد ہیپاٹائٹس کا شکار ہوگئے چاروں تحصیلوں میں 35ٹیکسٹائل ملز شوگر ملز تیزاب فیکٹریا ں کنٹرول شیڈ تھرمل پاور سینکڑوں غیرقانونی اینٹوں کے بھٹے ڈسٹلری یونٹ 35انسانی جانیں نگل چکا تفصیل کیمطابق آلودگی پھیلانے والی فیکٹریوں بغیر ٹریٹمنٹ پلانٹ لاکھوں لوگوں کی زندگیاں برسوں سے اجبرن بنا(بقیہ نمبر14صفحہ12پر)

رکھی ہیں مقامی کمیونٹی کو روزگار کیلئے خصوصی کوٹہ فری بجلی کے دعو ے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں 50سے زائد گندگی اور آلودگی پھیلانے والی فیکٹریاں 3بجلی پیدا کرنے والے تھرمل پاور ہاوس پاک عرب آئل ریفائری تیزاب فیکٹری الکوحل تیار کرنے والا ڈسٹلری یونٹ 4شوگر ملوں میں لگے کیمیکل پلانٹ کی زہریلی آلودگی کی وجہ سے انسان تو دور کی بات پرندے نقل مکانی کرگئے بدترین خطرناک آلودگی کی وجہ سے زندگی کی بازی ہار چکے ہے جبکہ ٹبہ کریم آباد جھنگ موڑ مظفرگڑھ شہر ٹبی حسین آباد تلکوٹ فضل نگر دستی والا بستی مہاراں بہاری کالونی ودیگر مضافاتی علاقے خانپوربگاشیر محمد موسی بھیمہ سیال بصیرہ مونڈکا میر پور پیر محب جہانیاں شاہ گڑھ پیر جہانیاں محمود کوٹ لال پیر ڈپو زیرپانی زہریلہ ہوچکا ہے لوگ ہیپاٹائٹس چشم الرجی دمہ جیسی مختلف موذی بیماریوں میں مبتلاء ہیں جبکہ ان تمام آلودگی اور زہریلی کیمیکل کا سبب بننے والے تمام صنعنتی اداروں میں مقامی افراد کیلئے روزگار تک میسر نہیں ہیں شہریوں نے احتجاج کرتے ھوئے ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کمشنر ڈیرہ غازی خان سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

حملہ

مزید : ملتان صفحہ آخر