انٹر ڈسٹرکٹ اور انٹر ریجنل مقابلے پشاور میں منعقد کئے جائیں گے: محمود خان

انٹر ڈسٹرکٹ اور انٹر ریجنل مقابلے پشاور میں منعقد کئے جائیں گے: محمود خان

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے صوبے میں انڈ ر 21 (U-21) گیمز کی حتمی تاریخوں کی منظوری دے دی ہے، جس کے تحت صوبے بھر میں کھیلوں کے مقابلے 6مارچ سے شروع ہورہے ہیں جبکہ انڈر21 گیمز کا باقاعدہ افتتاح 8 مارچ سے کیا جائے گا۔افتتاحی تقریب کے موقع پر وزیراعظم عمران خان کی آمد بھی متوقع ہے۔ پراونشل راؤنڈ میں انٹر ڈسٹرکٹ گیمز مقابلے 6 مارچ سے 10 مارچ تک منعقد کئے جائیں گے ان کھیلوں میں ولی بال، اتھلیٹکیس، ٹگ آف وار، فٹبال، کبڈی، بیڈمنٹن وغیرہ جس میں کل 2940 کھلاڑی صوبے کے مختلف اضلاع سے حصہ لیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ اس کے ساتھ ساتھ پراونشل راؤنڈ میں انٹر ریجنل گیمز مقابلے بھی 6 مارچ سے 10 مارچ تک منعقد کئے جائیں گے، جس میں خیبرپختونخوا کے سات ڈویژنز کے کھلاڑی حصہ لیں گے۔ انٹر ریجنل گیمز میں مرد اور خواتین کھلاڑی بیس بال، ہینڈ بال، لان ٹینس، سکواش، باکسنگ، باسکٹ بال، ہینڈ بال، تائیکوانڈو، جوڈو، اوشو، ہاکی، سنوکر، سائیکلنگ و دیگر مقابلوں میں حصہ لیں گے۔ انٹر ریجنل گیمز میں کل 1743 کھلاڑی حصہ لے رہے ہیں جن میں 994 مرد اور 749 خواتین کھلاڑی شامل ہیں۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ انٹر ڈسٹرکٹ اور انٹر ریجنل مقابلے پشاور میں منعقد کئے جائیں گے جس کے لئے صوبائی حکومت نے تمام تر انتظامات مکمل کرلئے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبائی سطح پر سب سے بڑے کھیلوں کے مقابلوں کا انعقاد خیبرپختونخوا میں دیر پا امن کا ثبوت ہے اور موجودہ صوبائی حکومت کیلئے فخر کا باعث ہے۔ وہ وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں خیبرپختونخوا انڈر21 گیمز 2020 کے انعقاد اور انتظامات کے حوالے سے جائزہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ کے مشیر برائے ضم شدہ اضلاع اجمل وزیر، انسپکٹر جنرل پولیس خیبرپختونخواثناء اللہ عباسی،پرنسپل سیکرٹری برائے وزیراعلیٰ شہا ب علی شاہ،سیکرٹری ریلیف عابد مجید، سیکرٹری ہیلتھ، سیکرٹری سپورٹس، ڈائریکٹرجنرل سپورٹس، ہیڈکوارٹر 11 کے نمائندے، ڈی جی ریسکیو1122 و دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کو انڈر 21 گیمز کے انعقاد، انتظامات، سہولیات و دیگر اُمور پر پیشرفت کے حوالے سے تفصیلی بریفینگ دی گئی جن میں کھیلوں کی کیٹگریز، شیڈول، ونیوز، رکھلاڑیوں کی رہائش کیلئے منصوبہ بندی، ٹرانسپورٹیشن، افتتاحی اور اختتامی تقاریب شامل ہیں۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ انڈر 21 گیمز کے دوسرے راؤنڈ میں انٹر ڈسٹرکٹ گیمز جن میں ہاکی، ٹیبل ٹینس، جوڈو، کراٹے، تائیکوانڈو، ریسلنگ، ولی بال، اتھلیٹکس و دیگر مقابلے شامل ہوں گے۔ دوسرے راؤنڈ کا انعقاد 15 اپریل سے 18 اپریل 2020 تک کیا جائے گا۔ مقابلوں میں کل 6825 کھلاڑی حصہ لیں گے جن میں 3955 مرد کھلاڑی جبکہ 2870 خواتین کھلاڑی شامل ہوں گے۔ دوسرے راؤنڈ کیلئے کھلاڑیوں کا اوپن ٹرائل 2 اپریل سے 10 اپریل تک مکمل کیا جائے گا۔مزید بتایا گیا کہ کھلاڑیوں کیلئے گیمز وینوز میں حیات آباد سپورٹس کمپلیکس، پشاور سپورٹس کمپلیکس، ارینہ ہال، اتھیلٹک گراؤنڈ پشاور یونیورسٹی، جے کے ڈی یونیورسٹی ٹاؤن، گورنمنٹ کالج پشاور، نادرن بائی پاس پشاور، گرین ہوٹل صدر کینٹ پشاوراور نشتر ہال پشاور شامل ہیں جہاں پر خواتین گیمز کے مختلف مقابلے منعقد کئے جائیں گے۔ اسی طرح مردکھلاڑیوں کیلئے پشاور میں رہائش بارے بھی تفصیلاً بتایا گیا۔ پشاور کے مختلف ہوٹلوں میں ریجنل، ڈسٹرکٹ ٹیمز کیلئے رہائش کے لئے تمام تر انتظامات اورہوٹلوں کی بکنگ مکمل کی گئی ہے۔اسی طرح خواتین کھلاڑیوں کیلئے رہائشی کمیٹی کے ذریعے ٹیموں کی رہائش کیلئے بھی تمام تر انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں جبکہ انڈر 21 گیمز ٹرانسپورٹیشن کمیٹی کھلاڑیوں کی ٹرانسپورٹیشن یقینی بنائے گی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ انڈر21 گیمز کی افتتاحی تقریب 8 مارچ2020 کو قیوم سٹیڈیم پشاور میں منعقد کی جائے گی جس کے لئے تمام تر انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ اسی طرح 10 مارچ2020 کو اختتامی تقریب انعقاد بھی قیوم سٹیڈیم پشاور میں کیا جائے گا۔ اس مو قع پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں کھیلوں کے شعبے میں کافی پوٹینشل موجود ہے۔ صوبائی حکومت صوبے میں کھیلوں کے فروغ کیلئے بھر پور اقدامات کر رہی ہے۔ اُنہوں نے کہاکہ انڈر21 گیمز کے انعقاد کیلئے صوبائی حکومت تمام تر تعاون فراہم کر رہی ہے۔

مزید : صفحہ اول