فحش تصاویر بیچنے کے لیے کرونا وائرس کا استعمال

فحش تصاویر بیچنے کے لیے کرونا وائرس کا استعمال
فحش تصاویر بیچنے کے لیے کرونا وائرس کا استعمال

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کا خوف دنیا بھر میں پایا جا رہا ہے اور اس وباءکے ٹرینڈ سوشل میڈیا پر پوری دنیا میں ٹاپ پر ہیں چنانچہ تشہیر کے کچھ بھوکے بھی موقع غنیمت جانتے ہوئے اس وباءکا بھرپور استعمال کر رہے ہیں۔ اب ان فحش فلموں کی اداکاراﺅں اور ویب کیم ماڈلز ہی کو دیکھ لیں جو اپنے ’اونلی فینز‘ (OnlyFans)اکاﺅنٹس کی تشہیر کے لیے کورونا وائرس کا نام اور اس کے ٹرینڈز کو بروئے کار لا رہی ہیں۔ ڈیلی سٹار کے مطابق کورونا وائرس ٹرینڈ میں بے شمار ایسی اداکاراﺅں اور ماڈلز کی پوسٹس آ رہی ہیں اور لوگوں کو اپنے اونلی فینز اکاﺅنٹ کو سبسکرائب کرنے کی ترغیب دے رہی ہیں۔ کلوئے ڈائمنڈ نامی ایک ماڈل نے ٹوئٹر پر ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ ”کیا آپ کو کورونا وائرس ہو گیا ہے؟ شاید میری ویڈیوز اس کا علاج ہو سکتی ہیں اور نہیں تو آپ میری ویڈیوز دیکھ کر کچھ بہتر محسوس کریں گے۔ چنانچہ میرے اونلی فینز اکاﺅنٹ کو سبسکرائب کیجیے۔

پونی پائی نامی اداکارہ نے کورونا وائرس کے ٹرینڈ میں پوسٹ کی گئی اپنی ٹویٹ میں لکھا ہے کہ ”اونلی فینزپر میرا اکاﺅنٹ سبسکرائب کیجیے اور صرف 5ڈالر میں پورا مہینہ ویڈیوز، تصاویر، لائیو چیٹ اور بہت کچھ حاصل کیجیے۔ “کولین مک گنیس نامی ماڈل نے لکھا ہے کہ ”خصوصی مواد حاصل کرنے کے لیے میرا اونلی فینز پیج سبسکرائب کیجیے۔“ ان کے علاوہ سینکڑوں کی تعداد میں اداکارائیں اور ماڈلز کورونا وائرس کے ٹرینڈز میں ایسی ہی پوسٹس کر رہی ہیں۔ واضح رہے کہ اونلی فینز ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جہاں صارفین پیسوں کے عوض کسی کے اکاﺅنٹ کو سبسکرائب کرتے ہیں اور ان کی ویڈیوز اور تصاویر دیکھتے اور ان کے ساتھ چیٹنگ کرتے ہیں۔ ان اکاﺅنٹس سے یہ ماڈلز اور اداکارائیں ہزاروں ڈالر ماہانہ کما رہی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس