لیاقت آباد جائیداد کا تنازع ، بہنوئی نے زہر دے کر سالے کو موت کے گھاٹ اتار دیا

لیاقت آباد جائیداد کا تنازع ، بہنوئی نے زہر دے کر سالے کو موت کے گھاٹ اتار ...

  

لاہور(خبر نگار) لیاقت آباد کے علاقے میں بہنوئی نے اپنے تین دوستوں سے ملکر 25سالہ سالے کو جائیداد کے تنازع پر زہر دیکر موت کے گھاٹ اتار دیا پولیس نے لاش قبضہ میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانے منتقل کرکے تفتیش شروع کر دی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ لیاقت آباد کے علاقے پنڈی راجپوتاں کے رہائشی محمد عباس کے مطابق اس کی تین بیٹیاں اور ایک بیٹا محمد اویس ہے جو مقامی فیکٹری میں کام کرتا ہے ۔ ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب اس کا بیٹا محمد اویس گھر میں بیٹھا تھا کہ اس کا داماد محمد سلیم اپنے دوستوں محمد آصف ، علی عرف لالو اور سرور مستری کے ہمراہ آیا اور سالے محمد اویس کو کھانا کھانے کے بہانے گھر سے لے گیا رات گئے تک گھر نہ واپس آنے پر اہل خانہ نے تلاش کیا مگر وہ نہ ملا اس کے موبائل فون پر بھی رابطہ کیا گیا مگر رابطہ نہ ہو سکا بعدازاں محمد آصف کی دکانوں کے اوپر بنے فلیٹوں پر جا کر دیکھا تو محمد اویس مردہ حالت میں پڑا تھا اس کے منہ سے خون اور جھاگ نکل رہی تھی اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پرپہنچ کر لاش قبضہ میں لیکر جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرکے لاش مردہ خانے منتقل کر دی ہے پولیس نے مقتول کے والد محمد عباس کی مدعیت میں داماد محمد سلیم اس کے دوستوں علی عرف لالو ،محمد آصف اور سرور مستری کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرلیا ہے مقتول کے والد کاکہنا ہے کہ میرے داماد سلیم نے بیٹے محمد اویس کو جائیداد ہتھیانے کے لئے قتل کیا ہے اس سے قبل بھی ملزم میرے بیٹے کو گندے نالے میں دھکا دیکر قتل کرنے کی کوشش کر چکا تھا ۔

مزید :

علاقائی -