سرگودھا، بچی اوربچے کو بداخلاقی کے بعد قتل کرنیوالے ملزم گرفتار

سرگودھا، بچی اوربچے کو بداخلاقی کے بعد قتل کرنیوالے ملزم گرفتار

  

سرگودھا(این این آئی) سرگودھا کے موضع بچہ کلاں میں 2حقیقی بھائیوں کی 11 سالہ بچی سے اجتماعی بداخلاقی کی واردات پر پولیس تھانہ میلہ نے ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ذرائع کے مطابق نواحی علاقہ بچہ کلاں میں 11سالہ بچی سونیا گھر سے رفع حاجت کے لئے کھیتوں میں گئی تو وہاں حسن بلال اور اقبال نے اسے پکڑ لیا اور باری باری بداخلاقی کا نشانہ بنا یا اور حالت غیر میں چھوڑ کر فرار ہو گے۔ جس کے بعد بچی کو ٹی ایچ کیو ہسپتال کوٹ مومن منتقل کر کے طبی ملاحظہ کروایا گیا جس پر پولیس نے بچی کے والد احمد خان کی رپورٹ پردونوں بھائیوں کو گرفتار کرکے حوالات میں بند کردیا۔دریں اثنا بھلوال پولیس نے انڈے فروخت کرنے والے بچے کو بداخلاقی کے بعد قتل کرنے والے اصل ملزمان کو گرفتار کر لیا جنہوں نے پولیس کو بیان بھی ریکارڈ کروا دیا۔ بھلوال کے علاقہ میں محنت کش محمد نذیر کا بیٹا علی رضا انڈے فروخت کرکے اپنے والد کا ہاتھ بٹاتا تھا دو ماہ قبل جب 11 سالہ علی رضا رات کے وقت انڈے فروخت کرنے کے لیے گیا تو اوباش نوجوانوں نے اسے پکڑا اور ویرانے میں لیجا کر بداخلاقی کا نشانہ بنانے کے بعد اسے قتل کر دیا اور نعش نہر کنارے کھیتوں میں پھینک دی تھی ملزمان کی عدم گرفتاری پر اس کے باپ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے جلسہ کوٹ مومن میں ملزمان کی عدم گرفتاری پر احتجاج کیا جس کے بعد وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے اس واقعہ کا نوٹس لیااور پولیس کو ملزمان کی گرفتاری کا ٹاسک دیا۔جس کے بعد پولیس متحرک ہوئی تو پولیس نے زیادتی کے بعد قتل ہونے والے علی رضا کے اصل قاتلوں کو گرفتار کر لیا۔ ابتدائی تفتیش میں ملزم نے اعتراف کیا ہے کہ بداخلاقی کے بعد جب بچے نے کہا کہ اسے پہچان لیا ہے تو اس نے گلے میں پھندا ڈال کر اسے قتل کر دیا اور نعش نہر کنارے کھیتوں میں پھینک کر فرار ہو گیا اسکے ساتھ دیگر ملزمان بھی تھے، پولیس کے مطابق مزید تفتیش جاری ہے۔

مزید :

علاقائی -