خیبر پختونخوا اسمبلی میں ریکارڈ قانون سازی کی گئی : مظفر سید

خیبر پختونخوا اسمبلی میں ریکارڈ قانون سازی کی گئی : مظفر سید

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر خزانہ مظر سید ایڈوکیٹ نے کہا ہے کہ اراکین اسمبلی کی استعداد کار و صلاحیتوں کو بڑھانے کیلئے بیرونی ممالک کے پارلیمنٹس کے تجربات سے آگاہی ضروری ہے اور اس سلسلے میں Scottish پارلیمان کے امور قانون سازی اور دیگر حاصل کردہ تجربات سے استفادہ اٹھانا صوبائی اراکین اسمبلی کیلئے انتہائی مفید و مدد گار ثابت ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج ڈپٹی سپیکر صوبائی اسمبلی پروفیسر ڈاکٹر مہر تاج روغانی اور دیگر اراکین اسمبلی کے ہمراہ Scottish پارلیمنٹ میں دو روزہ کیپسٹی بلڈنگ سیشن کے احتتام پر اظہار خیا ل کرتے ہوئے کیا ۔ واضح رہے کہ ڈپٹی سیپکر پروفیسر ڈاکٹر مہر تاج روغانی اور صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ سمیت اپوزیشن لیڈر مولانا لطف الرحمان ، ارشد خان عمر زئی ، نگہت اورکزئی اور دیگر اراکین صوبائی اسمبلی کا ایک مشترکہ وفد ان دنوں برطانیہ کے دورے پر ہے جنہوں نے اراکین اسمبلی کے استعداد کار و صلاحیتوں کو بڑھانے اور انہیں بیرونی ممالک کے تجربات سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے تشکیل کردہ تربیتی پروگرام کے تحتcottish Sپارلیمان کا تفصیلی دورہ کیا اور وہاں کے قانون سازوں کی ذمہ داریوں ، استعداد کار ، قواعد و ضوابط اور دیگر امور سے متعلق شناسائی حاصل کی۔ دو روزہ سیشن کے احتتام پر اظہار خیال کرتے ہوئے صوبائی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ اراکین اسمبلی کیلئے بیرونی ممالک کے قانون ساز اسمبلیوں سے آگاہی اور واقفیت حاصل کرنے کیلئے شروع کردہ مذکورہ تربیتی پروگرام اپنی نو عیت کا ایک منفرد اور مفید اقدام ہے جس کے ذریعے صوبائی اسمبلی کے قانون ساز ایک گلوبل فریم ورک میں شامل ہو سکیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ خیبر پختونخوا اسمبلی مختلف قوانین اور بلوں کو پاس کرانے کے حوالے سے پورے ملک میں ایک نمایا مقام رکھتی ہے جس نے نہ صرف ریکارڈ قانون سازی کی ہے بلکہ اس اسمبلی کی کاروائی اور ممبران کے جملہ امور روایتی کاغذی طریقہ کار سے کمپیو ٹرائزڈ نظام پر منتقل کئے جا چکے ہیں جو ای گور ننس کی طرف ایک بڑا قدم ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبائی قانون سازوں کا مذکورہ دورہ نہ صرف بیرونی تجربات سے استفادہ حا صل کرنے کیلئے زیادہ موثر ثابت ہوگا بلکہ اس کے ذریعے ممالک کی باہمی قربت اور تعلقات مزید فروغ پا سکیں گے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -