ایٹا ٹیسٹ میں شامل نہ کرنا فاٹا کے طلبہ کے ساتھ ناانصافی ہے

ایٹا ٹیسٹ میں شامل نہ کرنا فاٹا کے طلبہ کے ساتھ ناانصافی ہے

  

پاراچنار(نمائندہ پاکستان) امسال فاٹا کے قابل طلبہ کو ایٹا ٹیسٹ میں شامل نہ کرنا فاٹا کے طلبہ کے ساتھ زیادتی ہے۔ان خیالات کا اظہار HRCPکرم ایجنسی کے کواڈنیٹر عظمت علیزئی نے طلبہ کے والدین سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ2005اور پھر 2014سے ایٹا ٹیسٹ میں فاٹا سیمت ملک بھرسے قابل طلبہ بھی ٹیسٹ میں شامل کیا گیا مگر اب افسوس ہورہی ہے کہ 2018 کے ایٹا ٹیسٹ میں فاٹا کے طلبہ کو شامل نہ کرنا ان قابل طلبہ کے ساتھ زیادتی ہے۔ والدین نے کہا کہ فاٹا بالخصوص کرم پاراچنار میں طلباء اور طالبات میں تعلیمی میعاری سب سے بہتر ہے۔ جنکی مثال پاراچنار میں دو گرلز کالج ہی ہے۔پاراچنار میں150سے زیادہ نجی سکولز تعلیمی ادارے موجود ہیں۔ HRCPاور طلبہ کے والدین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ 2018کے ایٹا ٹیسٹ میں فاٹا کو شامل کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -