اجتماعی شادی،83ہندو جوڑے رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئے

اجتماعی شادی،83ہندو جوڑے رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئے
اجتماعی شادی،83ہندو جوڑے رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئے

  

کراچی (ویب ڈیسک) پاکستان ہندو کو نسل کے زیر اہتمام اجتماعی شادی کا انعقاد کیا گیا،مقامی شادی لان میں 83 نوجوان ہندو جوڑوں کوایک بڑی تقریب میں رشتہ ازدواج میں منسلک کردیا گیا۔ پاکستان ہندو کونسل کے بانی اور سرپرست اعلیٰ ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی نے مہمانوں کا خیرمقدم کیا ان کے ہمراہ کونسل کے جنرل سیکریٹری ڈاکٹر دیپک کمار، چلہ رام کیوانی اور دیگر بھی موجود تھے۔

تقریب میں ماریشس کے سفیر اور قونصل جنرل نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی اس موقع پر پاکستان ہندو کونسل کے بانی ڈاکٹر رمیش کمار وانکوانی نے کہا کہ کونسل کے تحت یہ ہماری دسویں سالانہ تقریب ہے۔ اب تک ہم نے ایک ہزار نوجوان لڑکیوں اور لڑکوں کو ملک بھر سے منتخب کرکے رشتہ ازدواج سے وابستہ کیا ہے پھیروں کے ساتھ ساتھ سب کوایک ایک لاکھ روپے کی مالیت کا جہیز بھی دیتے ہیں جبکہ مالی طور پر پریشان لڑکوں کو رکشا بھی عطیہ کرتے ہیں۔ آج ہم نے 200 گھرانوں کی ماہانہ کفالت کا آغاز کیا ہے۔ اس موقع پر سندھ بھر کے 83 نوجوانوں کو رشتہ ازدواج سے بھی منسلک کرنے کی رسم ادا کی گئی۔

اس موقع پرڈاکٹر رمیش نے بھگت گائے اور گائتری منتر بھی پڑھے۔قبل ازیں پاکستان ہندو کونسل کے جنرل سیکریٹری نے کہا کہ پاکستان میں اقلیت کو بہتر سہولتیں اور مراعات حاصل ہیں ہم ایک مکمل آزاد اور برسہولت زندگی گزار رہے ہیں۔ اس موقع پر ہندو لڑکیوں اور نوجوانوں نے گیت بھی گائے۔پاکستان ہندو کونسل کے رکن چلہ رام کیلوانی نے کہا کہ کونسل بلاامتیاز ملک بھر سے ہندو برادری کے لوگوں کو مراعات اور سہولتیں فراہم کرتے ہیں اس مرتبہ بھی 83? نوجوان لڑکیوں اور لڑکوں کا تعلق سندھ کے مختلف اہم شہروں سے ہے یہ بہت اچھی کوشش ہے اس طرح ان میں احساس محرومی پیدا نہیں ہوتا حکومت پاکستان بھی ہندو برادری کو بلاامتیاز سہولتیں فراہم کرتی ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -