شام میں ترک فوج پر خاتون خودکش بمبار کا حملہ ،2فوجی جاں بحق

شام میں ترک فوج پر خاتون خودکش بمبار کا حملہ ،2فوجی جاں بحق
شام میں ترک فوج پر خاتون خودکش بمبار کا حملہ ،2فوجی جاں بحق

  

دمشق(ڈیلی پاکستان آن لائن)شام کے شمال مغربی علاقے عفرین میں ایک کرد جنگجو عورت نے ترک فوجیوں کی پیش قدمی روکنے کے لیے خودکش بم حملہ کیا ہے جس کے نتیجے میں دو ترک فوجی مارے گئے ہیں۔

امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اس بیس سالہ کرد عورت کی شناخت زولوخ حمو کے نام سے ہوئی ہے اور وہ افیستا حبور کے نام سے شامی جمہوری فورسز (ایس ڈی ایف ) کے تحت ترک فوج کے خلاف لڑائی میں شریک تھی۔کرد جنگجو عورتوں کی تنظیم ویمن پروٹیکشن یونٹس ( وائی پی جے) ایس ڈی ایف کا حصہ ہے اور اسی تنظیم نے ایک بیان میں اس خودکش بمبار عورت کے ترک فوجیوں پر حملے کی اطلاع دی ہے۔

نیویارک ٹائمز نے زولوخ حمو کے یونٹ کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں اس کو ایک ہیروئین قرار دیا گیا ہے۔اس میں کہا گیا ہے کہ ” ہیروئین افیستا نے ٹینک پر حملہ کیا تھا اور اس کے ساتھ خود کو دھماکے سے اڑا دیا ہے۔

واضح رہے کہ ترک فوج نے اس ماہ کے اوائل میں شام کی سرحد عبور کر کے عفرین میں کرد اور وائی پی جی کے جنگجووں کے خلاف کارروائی شروع کر رکھی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -