ہارون آباد:اعجازالحق، حاجی یاسین اوردیگرافراد قتل مقدمہ سے بری

ہارون آباد:اعجازالحق، حاجی یاسین اوردیگرافراد قتل مقدمہ سے بری

  



ہارون آباد(نامہ نگار)سابق وفاقی وزیر سربراہ مسلم لیگ (ضیاء) محمد اعجاز الحق سابق ایم این اے،چیئرمین مسلم لیگ (ضیاء) حاجی محمد یاسین،صوبائی صدر مسلم لیگ (ضیاء) غلام مرتضی چوہدری سابق ایم پی اے اور ان کے دیگر ساتھیوں کو قتل کے مقدمہ کی سماعت میں بری کر دیا گیا ،تفصیلات کے مطابق 6فروی 2017کو دو گروپوں میں فائرنگ کے دوران سابق ایم پی اے شوکت محمود بسراء کے پرسنل سیکرٹری امتیاز حیدر قتل ہوئے تھے جن کا مقدمہ تھانہ سٹی میں سابق ایم پی اے شوکت محمود بسراء کی مدعیت میں درج (بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

ہوا تھا مقدمہ میں محمد اعجاز الحق،حاجی محمد یاسین،غلام مرتضی سابق ایم پی اے،عالم کمبوہ،آصف نذیر،عظیم گوہیر کو نامزد کیا گیا تھااور بعد میں بھی کچھ افراد کو نامزد کیا گیا تھا جس کی اعلی سطح پر انکوائری ہوئی جس میں ان کو بے گناہ قرار دیا گیاگیا اور عالم کمبوہ کوپولیس نے چلان کردیا،بعدا زاں شوکت محمود بسراء کی جانب سے استغاثہ دائر کیا گیا تھا جس پر سماعت کے بعدایڈیشنل سیشن جج حافظ محمد یوسف نے فیصلہ سناتے ہوئے استغاثہ کو خارج کر دیا اور تمام ملزمان کو بری کر دیا۔دوسری جانب سربراہ مسلم لیگ (ضیاء) محمد اعجاز الحق نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ہمیشہ حق اور سچ کی جیت ہوتی ہے اور ہم بے گنا ہ تھے اور آج ہمیں عدالت نے بری کیا پاکستان کو جوڈیشل سسٹم انصاف دے رہا ہے جھوٹ کے پاوں نہیں ہوتے اور ہمیشہ حق کی غالب آتا ہے۔

بری

مزید : ملتان صفحہ آخر