تشددواقعہ: زکریایونیورسٹی انتظامیہ میں ٹھن گئی، ڈاکٹر ریحان صادق مستعفی

    تشددواقعہ: زکریایونیورسٹی انتظامیہ میں ٹھن گئی، ڈاکٹر ریحان صادق مستعفی

  



ملتان(سٹاف رپورٹر) بہاالدین زکریا یونیورسٹی میں پشتون کونسل کیطرف سے تشدد کا سلسلہ جاری ہے، ایک اورطالب علم زخمی ہوگیا، وائس چانسلر حمایت میں آگئے تفصیل کے مطابق زکریا یونیورسٹی میں پر تشدد واقعات کا سلسلہ نہ رک سکا، گزشتہ روز بھی پشتون کونسل کی طرف سے ایک طالب (بقیہ نمبر42صفحہ12پر)

علم طلحہ میرانی کو شدید زدو کوب کیا گیا جس سے اس کے چہرے پر گہرے زخم آئے۔ملزموں کا کہنا تھا کہ اس کا تعلق پی ایس ایف سے ہے تاہم آر او ڈاکٹر ریحان صادق نے جا کر طلحہ کو ریسکو کیا اور طبی امداد دی جس کے بعد پشتون کونسل نے احتجاج شروع کردیا اور ریلی کی شکل میں کیمپس کا چکر لگایا اور جناح آڈیٹوریم کے سامنے دھرنا دے کر بیٹھے گئے جس پر پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی گئی، ذرائع کے مطابق اس صورتحال میں وائس چانسلر دھرنے میں پہنچ گئے اوران کی حمایت کا اعلان کیا اورکہا کہ ان کے خلاف پرچہ بھی واپس لے لیا جائے گااور ان کے موبائل فون بھی پولیس سے لیکر واپس کئے جائیں گے جبکہ آر او کو تبدیل کیا جائے گا، جس کے بعد مظاہرین منتشر ہوگئے، بعد ازں آر او ڈاکٹر ریحان صادق شیخ نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ اس موقع پر وی سی اور ڈاکٹر ریحان میں تلخ جملوں کا تبادلہ بھی ہوا، جبکہ اس سے قبل 28 دسمبر کے احتجاج کو لیکر بھی تلخ کلامی ہوچکی تھی، ا?ر او کا موقف تھا کہ پشتون کونسل کے جرائم میں ملوث طلبا کے خلاف کارروائی ہونی چاہئیجبکہ وائس چانسلر براہ راست اس کے حق میں نہیں تھے، جس پر دونوں میں خلیج وسیع ہوگئی اور استفعیٰ سامنے آگیا، وائس چانسلر آفس ذرائع کاکہنا ہے کہ امکان ہے

مزید : ملتان صفحہ آخر