بھارت افغانستان سے بلوچستان میں دہشتگردی کروا رہا ہے،میر ضیاء اللہ لانگو

  بھارت افغانستان سے بلوچستان میں دہشتگردی کروا رہا ہے،میر ضیاء اللہ لانگو

  



کوئٹہ (این این آئی)وزیرداخلہ بلوچستان میر ضیاء اللہ لانگو نے کہا ہے کہ بھارت افغانستان میں بیٹھ کر بلوچستان میں دہشتگردی کی کاروائیاں کروا رہا ہے، سکیورٹی فورسز نے بہتر حکمت عملی سے صوبے میں امن و امان کی صورتحال بہتر بنائی ہے، پشین کے علاقے سرخاب میں تحریک طالبان پاکستا ن کے دودہشتگردوں کا ہلاک کردیا گیاجو سابق صوبائی وزیرمصطفی ترین کے بیٹے کے اغواء سمیت سمیت دیگردہشتگردی کی پانچ وارداتوں میں ملوث تھے،کوئٹہ میں سال 2019ء میں دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی نظر آئی، اسحاق آباد میں مدرسہ خود کش حملہ میں خود کش حملہ آور کی شناخت ہوچکی ہے جس کے دیگر ساتھیوں کے متعلق مصدقہ معلومات حاصل کی جاچکی ہیں اورگروپ کے گرد گھیرا تنگ کیا جارہا ہے، مسنگ پرسنز کے نمائندوں نصر اللہ بلوچ اور ماما قدیر کی فہرست کے مطابق 350لوگ لاپتہ ہیں جن میں سے 300کے قریب بازیاب ہوچکے ہیں، یہ بات انہوں نے منگل کو سول سیکرٹریٹ کے سکندر جمالی آڈیٹوریم میں ڈی آئی جی پولیس کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ اور ڈی آئی جی سی ٹی ڈی اعتزاز گورایہ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی،وزیر داخلہ میر ضیاء لانگو نے کہا کہ گزشتہ روز سی ٹی ڈی اور حساس ادارے کو پشین میں بم دھماکوں،ٹارگٹ کلنگ اوراغواء کی وارداتوں میں ملوث دہشت گردوں کی سرخاب کے علاقے میں موجودگی کی خفیہ اطلاع ملی جس پر سی ٹی ڈی اور حساس اداروں کے اہلکاروں نے کارروائی کی اور کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان کے دو دہشتگرد مقابلے میں ہلاک ہوئے جن کی شناخت پیرشازالدین اور ذاکراللہ عرف گڈکے ناموں سے ہوئی جن کے قبضہ سے ایک عدد خود کش جیکٹ،تین دیسی ساختہ بم اور ایم ایم پسٹل،گولیاں بمعہ میگزین برآمدہوئیں انہوں نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے دونوں دہشتگرد پشین ڈسٹرکٹ میں دہشتگردی کی وارداتوں میں ملوث تھے،انہوں نے6جنوری کو موٹرسائیکل میں بم نصب کرکے جان اڈہ پشین پر لیویز کی گاڑی کو نشانہ بنایا تھا جس میں 12افرادزخمی ہوئے جس میں دو لیویزاہلکار شامل تھے

میر ضیاء اللہ لانگو

مزید : صفحہ آخر