کارڈیالوجی ملتان:ایم ایس کی اسامی کو تیسری بار مشتہرکرنیکی تیاریاں

  کارڈیالوجی ملتان:ایم ایس کی اسامی کو تیسری بار مشتہرکرنیکی تیاریاں

  



ملتان (وقائع نگار)محکمہ سپشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب کی بے حسی ایک بار بھر کھل کر سامنے آگئی۔ گزشتہ کئی ماہ سے کارڈیالوجی میں ایم ایس کے عہدے پر گریڈ 18 کے جونیئر ڈاکٹر کو اضافی چارج دیکر کر کام چلایا جارہا ہے۔مزید برآں محکمہ سپشلائزڈ ہیلتھ کیئر نے ملتان سمیت (بقیہ نمبر53صفحہ7پر)

صوبہ بھر کے ساتھ ٹیچنگ ہسپتالوں میں میڈیکل سپرنٹینڈنٹ کے تعیناتی کے احکامات جاری کردیے ہیں۔باضابط جاری احکامات کے مطابق چلڈرن ہسپتال ملتان میں ایم ایس گریڈ 20 کے ڈاکٹر اطہر اقبال کو تعینات کیا گیا ہے۔وہ اس سے قبل سی ای او ہیلتھ پاک پتن اپنے فرائض سرانجام دے رہے تھے۔جبکہ ڈاکٹر زاہد اختر کو ایم ایس کیو ہسپتال لاہور لگایا گیا ہے۔وہ اس قبل ڈی ایچ کیو ہسپتال خانیوال میں بطور ایم ایس کام کررہے تھے۔اس کے علاوہ ڈاکٹر محمد سہیل کو ایم ایس راولپنڈی کارڈیالوجی۔ڈاکٹر سکیم شہزاد کو ایم ایس سروسز ہسپتال لاہور۔ڈاکٹر محمد رمضان سمرا کو سردار بیگم ٹیچنگ ہسپتال سیالکوٹ۔ڈاکٹر اقبال شاہد کو ایم ایس جناح ہسپتال اور ڈاکٹر احتشام الحق کو ایم ایس سر گنگا رام ہسپتال میں تعینات کیا گیا ہے۔مزید برآں ذرائع سے معلوم ہوا ہے محکمہ سپشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نے چوہدری پرویز الہی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں کئی ماہ گزرنے کے باوجود مستقل ایم ایس کو تعینات نہیں کیا۔کیونکہ گریڈ 18 کے جونیئر ڈاکٹر فہیم لابر ذرائع نے اس بات کا بھی انکشاف کیا ہے کارڈیالوجی ملتان میں ایم ایس لگانے کیلئے تیسری بار ایم ایس کی آسامی کو مشتہر کیا جائے گا۔

مشتہر

مزید : ملتان صفحہ آخر