محبان بھوپال فورم کے زیر اہتمام محفل ِ طنز و مزاح کا انعقاد

  محبان بھوپال فورم کے زیر اہتمام محفل ِ طنز و مزاح کا انعقاد

  



کراچی (پ ر) محبان بھوپال فورم کے زیر اہتمام با اشتراک اردو ڈکشنری بورڈ محفل ِ طنز و مزاح کا انعقاد کیا گیا، جس میں صدارتی خطاب میں معروف لکھاری اور قلم کار رضوان صدیقی نے کہا طنز و مزاح لکھنا ہر ایک کے بس کی بات نہیں شاید اس ہی بنا پر نثر اور شاعری میں کوئی نئے نام سامنے نہیں آرہے ہیں۔ لیکن طنز و مزاح کے حوالے سے الیکٹرونیک میڈیا نے مختلف پروگرام پیش کرکے اس کو زندہ رکھنے کی اپنی کوشش کی ہے۔ مہمان خصوصی انجینئر وسیم فاروقی نے کہا جو طنز و مزاح سے وابستہ شخصیات سامنے آرہی ہے ان کا دم غنیمت ہے۔ اردو ڈکشنری بورڈ کے سربراہ ڈاکٹر شاہد ضمیر نے کہا مزاح اور پکھڑ پن کے درمیان ایک لکیر ہوتی ہے اس کو نظر انداز کیا جائے تو توہین اور بدتہذیبی میں شمار ہوجاتا ہے اس موقع پر صاحب اعزاز معروف طنز و مزاح نگار جوکہ کینیڈا سے تشریف لائے ہیں انہوں نے اپنی تخلیقات نظر سامعین کیں انکے تحریر کو سنانے کے انداز اور اس کی پچ لائن پر سامعین دل کھول کر ھنسے اور خراج تحسین پیش کیا۔ محبان بھوپال فورم کی بانی و چیئر پرسن محترمہ شگفتہ فرحت نے کہا کہ فورم اپنے طور پر کوشش جاری رکھے ہوئے ہے کہ شہر اور ملک وحالات میں بہتری پیدا ہو اور لوگ اس طرح کی تقریبات میں شرکت کرکے اپنے مسائل اور غم کچھ دیر کے لئے بھول جایں اور تازہ دم ہوجایں۔ اس موقع پر سینئر مزاح نگار محمد اصغر خان نے اپنی تخلیق خان کی ڈائری سے کچھ مزاحیہ تحریریں پیش کیں، جبکہ معروف مزاح نگار محمد اسلام نے اپنی تحریر کردہ کتابوں سے فکائیہ تحریریں سنایں اور محفل کو کشتِ زار بنادیا، اس موقع پر ڈاکٹر ساجدہ سلطانہ، محمد ناصر علی، محسن نقی، روبینہ تحسین بینا نے بھی اپنی تحریروں سے کچھ اقتصابات پڑھ کر سنائیں۔ محفل کا دورانیا تقریباً 3 گھنٹے پر مہیط تھا مگر طنز ومزاح کی اس محفل میں وقت کا پتا بھی نا چل سکا۔ تقریب کی نظامت کے فرائض معروف اینکر شاہد مسرور نے احسن طریقے سے انجام دیئے اور اپنے برجستہ جملوں سے سامعین کو ایک لمحے کے لئے بھی بوریت کا احساس نہ ہونے دیا۔ تلاوت قرآن پاک کی سعادت ابن عظیم فاطمی جبکہ نعت رسول ؐ نظر ناطمی نے پیش کی، مہمانوں کا شکریہ اور تحفے تحائف اور کتابیں ناظم تقریب اویس ادیب نے پیش کئے اس تقریب میں معروف شخصیات جن میں ڈاکٹر رئیس صمدانی، احمد سلیم صدیقی، ظفر بھوپالی، نفیس احمد خان، محترمہ ریحانہ روحی، نعیم قریشی، عثمان دموہی، نعیم قریشی، ادریس غازی،معروف صحافی حنیف عابد، زیب اسکار، محترمہ شازیہ عالم، محترمہ شازیہ ناز، محترمہ شہناز رضوی، محترمہ زرین مسود، محترمہ نغمہ نیاز، آفتاب عالم قریشی، آصف مالک،محمد رفیق ایڈ و کیٹ، لالہ سلیم، محترمہ شہانہ جاوید، محترمہ یاسمین یاس، شاہین مصور، محترمہ طلت خان، فیصل جوش، محترمہ آسمہ، ارشاد، محترم ناگر، عبدالمجید محور، اقبال رضوی، کوثر رضوی، محسن نقی، محترمہ عظمی اعظمی،عبدالستار، محمد شہباز، سلیم احمد صدیقی، ڈاکٹر علی عمران کے علاوہ دیگر خواتین و حضرات بڑی تعداد میں موجود تھے۔

مزید : صفحہ آخر