سپریم کورٹ ،انور مجید کی درخواست ضمانت پرنیب کو نوٹس جاری

سپریم کورٹ ،انور مجید کی درخواست ضمانت پرنیب کو نوٹس جاری
سپریم کورٹ ،انور مجید کی درخواست ضمانت پرنیب کو نوٹس جاری

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس کے ملزم انور مجید کی درخواست ضمانت پرنیب کو نوٹس جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس کے ملزم انور مجید کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی،جسٹس عمر عطابندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی،جسٹس عمر عطابندیال نے کہا کہ درخواست میں طبی بنیاداورکیس میرٹ پر ضمانت کی استدعا کی گئی ہے،زیرعلاج ہونے کے باعث انور مجید تحقیقات میں شامل نہیں ہوئے،عدالت کیس میرٹ کو کیسے دیکھ سکتی ہے؟۔

وکیل انور مجید نے کہا کہ ایف آئی اے میں کیس2018 سے چل رہا تھا ،جسٹس عمر عطابندیال نے کہا کہ آپ پرانی باتوں کو چھوڑیں اپنے الزامات کا جواب دیں ،انور مجید نے سپریم کورٹ سے بھی تعاون نہیں کیا،کیامیڈیکل رپورٹس کو اس مرحلے پر دیکھا جا سکتا ہے؟۔

جسٹس مظہر عالم نے کہا کہ ہائیکورٹ نے علاج کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں دیا ،جسٹس فیصل عرب نے کہا کہ انور مجید کے ہسپتال میں ہونے کے باعث تحقیقات مکمل نہیں ہوئیں ،آپ علاج کیلئے بیرون ملک بھی جانا چاہتے ہیں ؟۔

وکیل انور مجید نے کہا کہ ملزم ایک ماہ سے سی سی یو میں زیرعلاج ہے سرجیکل ٹریٹمنٹ کیلئے بیرون ملک جانا ضروری ہے ،جسٹس فیصل عرب نے کہا کہ آپ کو کیس میں ہائیکورٹ کافیصلہ ختم کرکے واپس بھجواناہوگا ۔سپریم کورٹ نے انور مجید کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کردیا،عدالت نے کہا کہ کیس کو جلد دوبارہ سماعت کیلئے مقرر کیا جائے ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد