برطانیہ سے بھاگ کر پاکستان آنے والے جنسی درندے کو واپس بھیج دیا گیا

برطانیہ سے بھاگ کر پاکستان آنے والے جنسی درندے کو واپس بھیج دیا گیا
برطانیہ سے بھاگ کر پاکستان آنے والے جنسی درندے کو واپس بھیج دیا گیا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ سے بھاگ کر پاکستان آنے والے جنسی درندے کو واپس برطانیہ کے حوالے کر دیا گیا۔ دی مرر کے مطابق 43سالہ چوہدری اخلاق حسین نامی یہ شیطان صفت شخص برطانوی شہر روچڈیل میں رہتا تھا اور وہاں کم عمر بچیوں کو ورغلا کر منشیات کا عادی بنانے، جنسی زیادتی کرنے اور جسم فروشی کے دھندے پر لگانے والے ایک گینگ کا رکن تھا۔ جب اس گینگ کے سیاہ کرتوتوں کا پردہ چاک ہوا تو اخلاق حسین فرار ہو کر پاکستان چلا آیا۔

گزشتہ سال جنوری میں اسے فیصلہ آباد سے گرفتار کیا گیا تھا۔ اب اسے واپس برطانیہ بھجوا دیا گیا ہے۔ اسے برطانوی عدالت نے اس کی غیرموجودگی میں 19سال قید کی سزا سنائی تھی۔ تب سے مانچسٹر پولیس نیشنل اور انٹرنیشنل کرائم ایجنسیوں کی مدد سے اسے گرفتار کرکے واپس برطانیہ لیجانے کی کوشش کر رہی تھی۔ یہ شخص زیرحراست تھا اور اس نے عدالت کو جھوٹ بولا کہ برطانیہ میں ہی مقیم اس کے ایک رشتہ دار کی موت ہو گئی ہے اور اسے اس کی آخری رسومات میں شریک ہونے کی اجازت دی جائے۔عدالت نے اجازت دے دی اور اسے ضمانت پر رہا کر دیا گیا لیکن یہ شخص فرار ہو کر پاکستان آ گیا تھا۔

مزید : برطانیہ