خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کا سلسلہ جاری، ہارون خان شنواری 

خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کا سلسلہ جاری، ہارون خان ...

  

پشاور(سٹاف رپوٹر)جائنٹ صوبائی الیکشن کمشنر خیبر پختونخواہارون خان شنواری نے کہا ہے کہ صوبہ میں آئندہ انتخابات کی تیاریوں کا سلسلہ جاری ہے، معاشرے کے تمام طبقات بالخصوص خواتین، اقلیتی برادری اور معذور افراد کی سیاسی اور انتخابی عمل میں شرکت کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا اس لئے سول سوسائٹی سمیت میڈیا  تمام طبقات کی انتخابی عمل میں شر کت یقینی بنانے کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔ ان خیالات کا اظہار  انہوں نے پشاور میں جینڈر اینڈ ڈیسیبلٹی الیکٹورل ورکنگ گروپ خیبرپختوننخوااور صوبائی خدمات کمیشن ضلع پشاور کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں جیندر فوکل پرسن سہیل احمد، ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر خدمات کمیشن ضلع پشاور محترمہ سمعیہ سرور شاہ، سی آئی پی کی  جانب سے طاہرہ کلیم اور احسان اللہ سمیت ورکنگ گروپ کے ممبران نے شرکت کی۔جائنٹ صوبائی الیکشن کمشنر ہارون خان شنواری نے کہا کہ اس سلسلے میں سول سوسائٹی اور میڈیا الیکشن کمیشن کا پیغام عوام تک پہنچانے کے لئے کلیدی کردارادا کریں، الیکشن کمیشن نے خیبر پختونخوا کے10اضلاع میں خواتین کی شناختی کارڈ بنوانے اور ووٹر رجسٹریشن کیلئے خصوصی مہم کے چوتھے مرحلے کا آغاز کیا ہے جو کہ متعلقہ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنرکی سربراہی میں نادرا اور سول سوسائٹی کے ساتھ ملکر دور افتادہ علاقوں میں موبائیل رجسٹریشن وین بھجواکر خواتین کے لئے  شناختی کارڈ کی سہولت فراہم  کریں گے۔ انہوں نے خواتین، افراد باہم معذوری اور دیگر محروم طبقات کے لئے الیکشن کمیشن کی جانب سے کئے گئے اقدامات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ بالخصوص حالیہ ضمنی انتخابات جوکہ 19فروری 2021کو منعقد ہوں گے، الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق پولنگ کے دن خواجہ سرا حاملہ خواتین اور افراد باہم معذوری کا خیال رکھا جائے گا، معزور افراد کے لئے پوسٹل بیلٹ پیپر کی سہولت بڑا قدم ہے اور وہ تکلیف سے بچنے کے لئے اس سہولت سے فائدہ اٹھائیں،سول سوسائٹی کے قابل عمل اور مفید تجاویز کا خیر مقدم کیا جائیگا۔ اجلاس کے دوران صوبائی خدمات کمیشن خیبر پختونخوا ضلع پشاور کے لئے مانیٹرنگ آفیسر سمعیہ سرور شاہ نے سرکاری اداروں کو شہریوں کو مختلف سہولیات کی مخصوص دورانیہ میں فراہمی کے حوالہ سے تفصیلی بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ صوبائی حکومت نے 2014میں اس حوالہ سے ایکٹ منظور کیا تھا جس کے تحت شہریوں کو زمینوں کا فرد، ڈومیسائل جیسے سہولیات کی فراہمی کے لئے محکموں کو مخصوص ایام میں فراہمی کے لئے پابند بنایا گیا ہے، بصورت دیگر تاخیرکی وجوہات بتانا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا، کہ ان کا ادارہ چیف سیکرٹری کی سرپرستی میں کام کر رہا ہے اور ہمارا مقصد سرکاری محکموں میں احتساب، شفافیت اور شہریوں کو سہولیات کی فراہمی کو مخصوص ایام کے اندر یقینی بنانا ہے، محترمہ سمعیہ سرور شاہ  نے بتایا کہ قانون کے مطابق زمین کا فرد 7دنوں اور ڈومیسائل 10دنوں میں فراہم کرنا متعلقہ محکمہ کی ذمہ داری ہے،سول سوسائٹی اور میڈیا سے اپیل کی کہ اس سلسلے میں انکی آگاہی مہم کو کامیاب بنا کراپنا کردار ادا کریں۔اس موقع پر سی آئی پی کی طرف سے محترمہ طاہرہ کلیم اور احسان اللہ نے  افراد باہم  معذوری، خواتین سمیت خواجہ سرا کے حوالہ سے چارٹر آف ڈیمانڈز پر مفصل بریفنگ دی گئی، اور بعد ازاں ان کی ایک کا پی جا ئینٹ  صوبائی الیکشن کمشنر کو پیش کی گئی،شرکا اجلاس نے اس موقع پر مختلف تجاویز پیش کی گئی اور کہا کہ  پولنگ اسٹیشنوں پر خواتین اور دیگر محروم طبقات کو مشکلات درپیش ہوتی ہیں۔ جس کو حل کرنے کے لئے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا۔  اس سے پہلے جینڈر فوکل پرسن سہیل احمد  نے تمام شرکا کو خوش آمدید کہا اور ووٹ کی اہمیت اور بالخصوص خواتین کی اہمیت کے حوالہ سے شرکا کو آگاہ کرتے ہوئے کہاکہ سول سوسائٹی کے ساتھ مشاورت کا سلسلہ جاری رہیگا تاکہ الیکشن کمیشن معاشرے کے تمام طبقات بالخصوص خواتین و معذور افراد کی انتخابی عمل میں شرکت یقینی بنانے کی جدوجہد میں کامیاب ہو

مزید :

پشاورصفحہ آخر -