خیبر پختونخوا حکومت نے ضلع صوابی میں مجسٹریٹی نظام کو دوبارہ بحال کردیا 

خیبر پختونخوا حکومت نے ضلع صوابی میں مجسٹریٹی نظام کو دوبارہ بحال کردیا 

  

صوابی(بیورورپورٹ) خیبر پختونخوا حکومت نے ضلع صوابی میں مجسٹریٹی نظام کو دوبارہ بحال کر دیئے جس کے تحت ڈپٹی کمشنر صوابی اور تمام اسسٹنٹ و ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز کو صوبائی حکومت نے 20سال بعد سپیشل مجسٹریٹ کے تمام اختیارا ت واپس کردئے گئے آرٹیکل 14-A CRPCمیں ترمیم  کرکے سپیشل مجسٹریٹ کلاس1 کے اختیارات جس میں میونسپل سروس،فارسٹ، موٹر وھیکل، پرائس کنٹرول، معدنیات و قدرتی وسائل، فوڈ سیفٹی، ہر قسم تجاوزات، جنگلات ودرخت، ٹریفک سمیت 21 قسم کے اختیارات اب اسسٹنٹ و ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز کے پاس ہوں گے ضلع صوابی خیبر پختون خوا کا چوتھا ضلع بن گیا فوری اور سستا انصاف کی فراہمی کیلئے سیکریٹری ہوم اینڈ ٹرائیبل افیئرز ڈیپارٹمنٹ خیبر پختون خوا نے نوٹی فیکیشن جاری کردیا ہے جس کے تحت 20 سال بعد خیبر پختون خوا میں مجسٹریسی نظام بحال کردیا اور ڈپٹی کمشنر صوابی کو نوٹی فی کیشن جاری کی جس مین کہا گیا کہ تمام اسسٹنٹ و ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز کو یہ اختیار تفویض کیا جارہا ہے کہ اپنے انے حدود مین جنگلات، درختوں کی کٹائی، قدرتی وسائل و معدنیات،لیز و کرشنگ فوڈ کنٹرول، فوڈ سیفٹی ہل فوڈاتھارٹی2014پبلک پراپرٹی،تجاوزات ہٹائیگی، واٹر کورس صفائی و ڈرینج، پاکستان موٹر وہیکل، ہائی ویز،اور نیشنل اہائی ویز سیفٹی، ٹولز پلازہ،روڈز،، پل پراپرٹی ایجنٹ موٹر بارگین، بلدیات، اور قبرستانوں میں تجاوزات ومرمت سمیت پرائس کنٹرول کرنے کا اختیار حاصل ہوگا سپیشل مجسٹریٹ کا اختیار اسسٹنٹ و ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز کو ملنے کی وجہ سے عوام کا وقت اور وسائل کے ضائع ہونے سے بچ جائیں گے کیونکہ ہر مسئلہ کیلئے عدالتوں میں سالوں خوارہوتے پیشیاں بگتی  وکیل اور عملہ کو الگ سے فیس اور خرچے دینے پڑتے مجسٹریسی نظام سے ضلع صوابی میں انقلاب آئے گا اور ہر سائل کی رسائی آسان اور سہل ہو جائے گی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -