عدالتی احکامات پر ایکسائزڈیپارٹمنٹ نے تحویل میں لی گئی گاڑی شہری کو واپس کردی

عدالتی احکامات پر ایکسائزڈیپارٹمنٹ نے تحویل میں لی گئی گاڑی شہری کو واپس ...

  

پشاور(نیوز رپورٹر) پشاور ہائیکورٹ کے احکامات پر ایکسائزڈیپارٹمنٹ نے تحویل میں لی گئی گاڑی شہری کو واپس کردی جبکہ عدالت نے کیس میں سابق ڈی جی ایکسائز اورتفتیشی آفیسر کو بھی اگلی سماعت پر عدالت پیش ہونے کا حکم دے دیا۔چیف جسٹس قیصررشید خان کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے شیروزحسن عرف گوشی کی رٹ پر سماعت کی۔ اس موقع پر ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل رب نواز خان بھی پیش ہوئے۔ رٹ میں درخواست گزار کے وکیل فرمان خٹک نے موقف اپنایاتھاکہ ایکسائز ڈیپارٹمنٹ نے انکے موکل کی نئی قیمتی گاڑی LED258اپریل 2019کو تحویل میں لی تھی اور بعد میں انکو پتہ چلا کہ متعلقہ گاڑی سیکورٹی اسکوارڈ کے زیراستعمال ہے جبکہ گاڑی کے مختلف پارٹس بھی تبدیل کردئیے گئے ہیں۔اس موقع پر عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار کو اوریجنل پارٹس اوراوریجنل بک سمیت گاڑی حوالے کردی گئی ہے جبکہ درخواست گزار نے رٹ واپس لینے کی بھی التجا کی تاہم چیف جسٹس قیصررشید خان نے اسوقت کے ڈی جی ایکسائز فیاض علی شاہ اورتفتیشی  آفیسر کو بھی آئندہ سماعت پر3فروری کو عدالت طلب کرلیا ہے۔ واضح رہے کہ ہائیکورٹ نے گزشتہ سماعت پر قراردیا تھا کہ اگر ضروری سمجھا گیا تو اس کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دیکر تحقیقات کرائی جائیں گی۔ایڈیشنل سیکرٹری ایکسائزسرداراسد ہارون اس کیس کے انکوائری آفیسر تھے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -