ڈیرہ اڈا ملتان: قانونی جنگ کا ڈراپ سین‘ ویگن سٹینڈز سیل

 ڈیرہ اڈا ملتان: قانونی جنگ کا ڈراپ سین‘ ویگن سٹینڈز سیل

  

ملتان (سپیشل رپورٹر)ضلعی و محکمہ ٹرانسپورٹ انتظامیہ اور ڈیرہ اڈا ڈی کلاس ویگن اسٹینڈ مالکان کی 26سالہ قانونی جنگ کا ڈارپ سین ہوگیا، عدالتی احکامات پر ضلعی انتظامیہ نے ڈیرہ اڈا سے غیر قانونی طور پر ہائی ایس ویگنیں اور دیگر گاڑیا ں چلانے پر الشہباز،العباس اور شالیمار ویگن اسٹینڈ سیل کردیئے،سٹرک اور چوکوں سے سواریاں بٹھانے پر 25سے زائد گاڑیاں تھانے میں بند کردی گئیں۔ٹرانسپورٹرز نے نے اڈے ڈی سیل کروانے کیلئے سیاسی و عدالتی جارہ جوئی شروع کردی۔تفصیل کے مطابق 1994ء سے ڈیرہ اڈا سے ڈی کلاس ویگن اسٹینڈ زکو شہر سے باہر منتقل کرنے (بقیہ نمبر25صفحہ 6پر)

کے حوالے سے ضلعی و محکمہ ٹرانسپورٹ انتظامیہ کی جانب سے جاری قانونی و عدالتی جنگ کا بالاآخر ڈراپ سین ہوگیا ہے۔ عدالتی جنگ جیتنے پر ضلعی انتظامیہ نے گزشتہ روز علی الصبح سٹی ٹریفک پولیس کے ہمراہ کاروائی کرتے ہوئے ڈیرہ اڈا چوک اور مضافات سے گاڑیاں چلانے والے تین ڈی کلاس ویگن اڈوں جن میں العباس،الشہبار اور شالیمار منی ٹریولز شامل ہیں کو سیل کردیا ہے جبکہ غیر قانونی طور پر گاڑیاں چلانے کی پاداش میں 25ویگنوں کو تھانے میں بند کردیا گیا ہے۔مذکورہ آپریشن کی نگرانی اے سی سٹی عابدہ فرید اور سیکرٹری آر۔ٹی اے رانا محسن نے کی جبکہ آپریشن ٹیم کو سٹی ٹریفک پولیس کی مدد حاصل تھی۔اس ضمن میں سیکرٹری آرٹی اے رانا محسن نے بتایا کہ عدالتی فیصلے کی روشنی میں مذکورہ ٹریولزکمپنیوں کو جنرل بس اسٹینڈ پر جگہ فراہم کردی گئی ہے جبکہ ان سے مذکرات کے بعد انھیں 24گھنٹے قبل جنرل بس اسٹینڈ منتقل ہونے کی ہدایت کی گئی تھی۔تاہم جنر ل بس اسٹینڈ منتقل نہ ہونے پر مذکورہ اسٹینڈ ضلعی انتظامیہ نے سیل کردیئے ہیں جبکہ قانونی خلاف ورزی کی مرتکب گاڑیوں کو بند کیا گیا ہے کیونکہ بند کی جانے والی گاڑیوں کے روٹ پر مٹ جنرل بس اسٹینڈ سے دیگر انٹر سٹی روٹوں پر منظور ہیں۔تاہم دوسری جانب الشہباز منی ٹریول کے مالک ملک عابد تھہیم نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ انتظامیہ نے عدالتی فیصلے پر من وعن عمل نہیں کیا اور ہمیں زبردستی نکالنے کی کوشش کی گئی جس کیلئے عدالتی جارہ جوئی کررہ ہیں۔

سیل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -