ضلع کچہری میں اسٹامپ پیپرز کے بعد عدالتی ٹکٹیں بھی نایاب  

ضلع کچہری میں اسٹامپ پیپرز کے بعد عدالتی ٹکٹیں بھی نایاب  

  

 ملتان (خصوصی رپو رٹر) ضلعی افسران کی مبینہ مجرمانہ خاموشی کے باعث ضلع کچہری میں اسٹامپ پیپرز کے بعد عدالتی ٹکٹیں بھی نایاب ہوگئیں۔مصنوعی قلت کے بعد اسٹامپ اور ٹکٹس مہنگے داموں فروخت کرنے کا سلسلہ تھم نہ سکا۔ عدالتوں اور دیگر سرکاری اداروں سے رجوع کرنے والے سائلین سراپا احتجاج ہیں۔تفصیل کے مطابق اسٹامپ اور ٹکٹس کو مہنگے داموں فروخت کرنے والا مافیا قانون کے شکنجے میں نہ آسکا۔ متعدد افسران کے دفتروں کے آس پاس بیٹھے(بقیہ نمبر28صفحہ 6پر)

 اسٹامپ فروش شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے لگے ہیں۔ اسٹامپ اور ٹکٹس کی نایابی کی خبر نے عوام کو شدید غم و غصہ میں مبتلا کردیا ہے۔ شہریوں نے اسٹامپ پیپرز اور عدالتی ٹکٹس کی مہنگے داموں فروخت کا معاملہ انتظامیہ کی نااہلی قرار دیا ہے۔ ایک بار دوبارہ سے متحرک ہونیوالے بلیکیوں نے عوام کی جیبوں پر ڈاکا ڈالنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ شہریوں عدنان مہدی، فرحان حیدر، عظمت شاہ سمیت دیگر نے کہا کہ ضلعی افسران کی مبینہ غفلت کی وجہ سے ہی اسٹامپ پیپرز اور عدالتی ٹکٹس کی تین گنا ریٹ پر فروخت جاری ہے۔انصاف کی تلاش میں عدالتوں اور دیگر سرکاری اداروں کا دروازہ کھٹکھٹانے والے سائلین سے داخلی راستے پر لوٹ کھسوٹ کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے۔حکومت کی عدم ترجیحات اور غلط پالیسیوں کی وجہ سے شہری تذبذب کا شکار ہیں۔اسی وجہ سے کئی سرکاری کام التوا کا شکار ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مافیا لاکھوں کی انویسٹمنٹ کرکے اسٹام اور ٹکٹس کو جمع کرلیتے ہیں۔ کچہری کے بیسیوں سٹالز پر بیٹھے اسٹامپ فروش اسٹامپ اور ٹکٹس کی نایابی کا رونا روتے ہیں۔ 50، 100، 200 والے اسٹامپ اور دو روپے سے 10 روپے والی ٹکٹس تین گنا ریٹ پر فروخت ہورہے ہیں۔ عوام نے حکومت کو اسٹام پیپر اور ٹکٹس کی مہنگے داموں فروخت کا نوٹس لیکر کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

نایاب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -