یو م یکجہتی کشمیر بھرپور انداز میں منایا جائے گا،محمد حسین محنتی

  یو م یکجہتی کشمیر بھرپور انداز میں منایا جائے گا،محمد حسین محنتی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)  جماعت اسلامی سندھ کے امیرو سابق رکن قومی اسمبلی محمد حسین محنتی نے پانچ فروری کو کراچی تاکشمور سندھ بھر میں یوم یکجہتی کشمیربھرپور طریقے سے منانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیری عوام نہ صرف اپنی آزادی بلکہ تکمیل پاکستان کی جنگ لڑرہے ہیں، کشمیری عوام پر انسانیت سوز مظالم اور ساڑھے پانچ سودنوں سے لاک ڈاؤن اور کرفیو پر عالمی ضمیر کی خاموشی وحکومتی بے حسی افسوس ناک ہے،عالمی انسانی حقوق کے ادارے کشمیرمیں حقوق انسانی کی پامالی کانوٹس اورکرفیوختم کرائیں، اقوام متحدہ اپنی پاس کرہ قراردادوں پر عمل درآمد کراکے کشمیریوں کو حق خودارادیت کا موقع دلائے۔ جماعت اسلامی اپنے کشمیری بھائیوں کو ہرگز تنہا نہیں چھوڑے گی05فروری کو کراچی تا کشمور سندھ میں یوم یکجہتی کشمیر منایا جائے گا، جبکہ 31جنوری سے ہفتہ یکجہتی کشمیر کے سلسلہ میں ریلیاں، سیمینار، مذاکرے، کل جماعتی کانفرس،جے آئی یوتھ کے تحت موٹرسائیکل ریلیاں اور میڈیا کے تمام ذرائع سے مسئلہ کشمیر کو اجاگر اور بھارتی مظالم سے اقوام عالم کو آگاہ کیا جائے گا، مرکزی نائب امیر لیاقت بلوچ کراچی،اسداللہ بھٹو نواب شاہ،ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی حیدرآباد، راشد نسیم سکھر ودیگررہنما پانچ فروری کو یکجہتی کشمیر ریلیوں کی قیادت کریں گے۔ پانچ فروری یوم یکجہتی کشمیرکا آغاز1990 میں انسانی ہاتھوں کی سب سے بڑی زنجیربناکرسابق امیرجماعت اسلامی پاکستان مرحوم قاضی حسین احمد نے کیاتھا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قباء آڈیٹوریم میں ہفتہ یکجہتی کمشیر کے حوالے سے پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کیا۔ صوبائی نائب امراء ممتاز حسین سہتو،عبدالغفارعمر اور سیکریٹری اطلاعات مجاہد چنا بھی اس موقع پر موجود تھے۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر پرغاصبانہ قبضہ اورظلم وتشدد کا بازار کرکے انسانیت کی تمام حدیں پارکردیں ہیں۔542دنوں سے کرفیو لگاکرکشمیر کو دنیا کے سب سے بڑی جیل اورجنت نظیر وادی کو جہنم بناکر رکھ دیا ہے۔بانی پاکستان حضرت قائد اعظم محمد علی جناح ؒنے فرمایا تھا کہ کشمیر ہماری شہ رگ ہے۔اس کے بغیر پاکستان نامکمل ہے۔ پاکستان کے حکمران صرف کشمیر کو نقشے میں شامل اور آخری فوجی اور آخری گولی تک لڑنے کا بیان داغ کراپنی ذمہ داری سے بری الزمہ نہیں ہوسکتے۔ڈاکٹر عافیہ صدیقی سے لیکر کشمیر کی آزادی تک وزیراعظم عمران خان نے قوم سے کئے گئے وعدے پورے نہیں کیے۔حکومت بھارتی درندگی اور مقبوضہ وادی میں 542 دنوں سے جاری کرفیو کی وجہ سے انسانی حقوق کی شدید پامالی کے مسئلے کو عالمی فورم پر اٹھائے اور کشمیر کی آزادی و بھارتی ظلم کے خلاف اوآئی سی سمیت دیگر فورم پر سفارتی کوششوں کو تیز کرے۔

مزید :

صفحہ اول -