نیب نے گزشتہ دس سالوں میں کتنا پیسہ ریکور کیا ؟ رپورٹ سینیٹ میں پیش کر دی گئی 

نیب نے گزشتہ دس سالوں میں کتنا پیسہ ریکور کیا ؟ رپورٹ سینیٹ میں پیش کر دی گئی 
نیب نے گزشتہ دس سالوں میں کتنا پیسہ ریکور کیا ؟ رپورٹ سینیٹ میں پیش کر دی گئی 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزارت قانون نے سینیٹ میں نیب کی جانب سے ریکور کی گئیں رقوم کی تفصیلات پر مبنی رپورٹ جمع کروا دی ہے جس میں بتایا گیا کہ گزشتہ دس سالوں میں 480 ارب روپے ریکور کیے گئے ہیں ۔

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت اجلاس جاری ہے جس دوران وزارت قانون نے سینیٹ میں تحریری جواب جمع کروا دیا گیاہے ، جواب میں بتایا گیاہے کہ نیب نے دس سالوں میں 480 ارب روپے ریکور کیے ہیں ، رقم پلی بارگین ، بینک ڈیفالٹ ، قرض ری شیڈولنگ اور عدالتی جرمانوں کی مد میں لی گئی ہے ،نیب نے رقوم 2011 سے اکتوبر 2020 کے دوران ریکورکیں۔

جواب میں بتایا گیاہے کہ نیب نے 46 ارب 38 کروڑ 389 روپے براہ راست ریکور کیے ہیں جبکہ 3کھرب 95 ارب 48 کروڑ دیگر ذرائع سے ریکور کیے ئے ،نیب نے 2020 میں سب سے زیادہ ریکوریاں کیں،2020 میں 24 کھرب 81 ارب 85 کروڑ روپے ریکور کیے گئے ۔وزارت قانون کی جانب سے جمع کروائے گئے جواب میں بتایا گیا کہ سب سے زیادہ ریکوری نیب لاہور نے کی ، نیب لاہور نے 10 ارب 89 کروڑ روپے ریکورکیے۔

سینیٹ اجلاس میں نیب سے متعلق سوال پر شور شرابہ دیکھنے میں آیا ، سینیٹر جاوید عباسی نے کہا کہ سوال کرنا پارلیمانی حق ہے ،وفاقی وزیر پارلیمنٹ کی توہین کر رہے ہیں،سب کو معلوم ہے پلی بارگین کیسے کرائی گئی۔وزیر مملکت علی محمد خان نے اجلاس کے دوران کہا کہ 2سال میں نیب نے تاریخی ریکوری کی ،ماضی میں کبھی اتنی ریکوری نہیں ہوئی، وزیراعظم اورہم پلی بارگین کےخلاف ہیں ،یہ کلنک کا ٹیکہ ہے جسے ختم ہونا چاہیے ،عمران خان کے دور میں نیب نے 390 ارب ریکور کیے ہیں ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -