”خدشہ تھا کہ ادائیگی کے بعد ویکسین کارآمد ہونے کی گارنٹی نہیں دی گئی “ وزیر مملکت علی محمد خان کا سینیٹ میں بیان 

”خدشہ تھا کہ ادائیگی کے بعد ویکسین کارآمد ہونے کی گارنٹی نہیں دی گئی “ وزیر ...
”خدشہ تھا کہ ادائیگی کے بعد ویکسین کارآمد ہونے کی گارنٹی نہیں دی گئی “ وزیر مملکت علی محمد خان کا سینیٹ میں بیان 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے کورونا ویکسین سے متعلق معاملہ کمیٹی کے حوالے کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین سینٹ کی زیر صدارت سینیٹ کا اجلاس ہوا جس دوران صادق سنجرانی نے کہا کہ اس معاملے پر ڈاکٹر فیصل کمیٹی میں آ کر بریفنگ دیں ، معاملے کو کمیٹی میں لے جاتے ہیں ۔ 

اجلاس کے دوران وزیر مملکت علی محمد خان نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرزکوپہلے ویکسین لگائی جائے گی، جنرل ہیلتھ ورکرزاورپھرضعیف افراد کوویکسین لگائی جائے گی،16 لاکھ ہیلتھ ورکرز کوپہلے ویکسین لگائی جائے گی،ویکسین کی فراہمی کیلئے 29 تاریخ کو حتمی اجلاس ہوگا،سندھ حکومت کے ساتھ زیادہ تعاون کریں گے،15 کروڑ ڈالر کی کابینہ سے منظوری ہو چکی ہے،ایشیائی ترقیاتی اور عالمی بینک نے قرض کی یقین دہانی کرائی ہے،کورونا ویکسین کی اسٹوریج کیلئے بھی انتظامات مکمل کر لیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خدشہ تھا ادائیگی کے بعد ویکسین کے کارآمد ہونے کی گارنٹی نہیں دی گئی،اس کے باوجود ہم یہ رسک لے رہے ہیں کیونکہ انسانی جان بچانا ضروری ہے،20 فیصد آبادی کو پہلے ویکسی نیشن کیلئے انتظامات کرنے کی کوشش ہے ۔

مزید :

قومی -