ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل  کی رپورٹ اور وزیراعظم کے اپوزیشن پر کرپشن کے الزامات ، اسفند یار ولی بھی میدان میں آگئے

 ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل  کی رپورٹ اور وزیراعظم کے اپوزیشن پر کرپشن کے الزامات ...
 ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل  کی رپورٹ اور وزیراعظم کے اپوزیشن پر کرپشن کے الزامات ، اسفند یار ولی بھی میدان میں آگئے

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن) عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے کہاہے کہ نوے دن میں کرپشن ختم کرنے والوں نے نو  سو دنوں میں کرپشن کے ریکارڈ قائم کردیئے ہیں، نام نہاد صادق اور امین کے دور حکومت میں کرپشن بڑھتی چلی جا رہی ہے ،دوسروں پر کرپشن کے بے جا الزامات لگانے والوں میں تھوڑی سے حیاء ہو تو فوری مستعفی ہو جائیں۔

نجی ٹی وی کےمطابق وزیر اعظم عمران خان کے کرپشن کے حوالے سے   دیئے جانے والے بیان پر ردعمل دیتے ہوئےاسفند یار ولی خان نے کہا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ میں ہمارے موقف کی تائید کی ہے، ترجمانوں کا ہجوم اب بھی عوام کو ماموں بنانے کی کوشش کر رہا ہے،عوام اب جاگ چکے ہیں، کوئی نیا منصوبہ نہیں لیکن کرپشن بڑھتی چلی جا رہی ہے، یہ نااہلی نہیں تو اور کیا ہے؟۔

واضح رہے کہ وزیراعظم نے ساہیوال میں خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ سینیٹ الیکشن میں بولیاں لگتی ہیں اور پیسا اوپر تک جاتا ہے، پچھلے الیکشن میں 20 لوگوں نے پانچ، پانچ کروڑ روپے لیے،سینیٹ میں پیسا چلنا ملک سے بہت بڑی غداری ہے، قومی اسمبلی میں بل پیش کر رہے ہیں کون کرپشن کر رہا ہے اور کون روک رہا ہے؟لاہور کے سب سے بڑے قبضہ گروپس، جس کی پشت پر سابق وزیراعظم اور ان کی حکومت تھی، نے اس کا محل گرتے دیکھا، لوگ پوچھتے ہیں تبدیلی کیا ہے؟ تو تبدیلی یہ ہے،جب وزیراعظم اور اس کی حکومت قبضہ گروپ کو بچائے گی تو عام لوگ کیا کریں گے؟ کہتے ہیں تبدیلی کیا ہے؟ یہ ہے تبدیلی، بڑے بڑے ڈاکوؤں پر ہاتھ ڈالا جائے گا یہ تبدیلی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کبھی کوئی ملک اس وقت تک تبدیل نہیں ہوا یا اس نے ترقی نہیں کی جب تک وہاں قانون کی بالادستی نہ ہوئی، دنیا میں جس ملک نے بھی ترقی کی ان سب ممالک میں خوشحالی کی سب سے بڑی وجہ قانون کی بالادستی ہے، وہاں کوئی ڈاکو نہیں کہہ سکتا ہے کہ جب تک مجھے این آر او نہیں دوگے میں تمہاری حکومت گرادوں گا۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -