قندھار میں پولیس چیف ایک بار پھر طالبان کے خود کش حملے میں بچ نکلا

قندھار میں پولیس چیف ایک بار پھر طالبان کے خود کش حملے میں بچ نکلا

کابل(اے این این) قندھار میں پولیس کا سربراہ ایک بار پھر طالبان کے خود کش حملے میں بچ نکلا،عبدالرزاق کے گھر پر حملے میں پولیس اہلکار سمیت دو افراد ہلاک،5حملہ آور فورسز کی فائرنگ سے ہلاک،ایک نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔افغان میڈیا کے مطابق قندھار میں افغان طالبان نے ایک بار پھر صوبائی پولیس چیف عبدالرزاق کے گھر پر دھاوا بولا تاہم پولیس چیف ایک اور خود کش حملے سے بچ نکلے ہیں۔ گزشتہ روز چھ طالبان جنگجوں نے معروف صوبائی پولیس سربراہ کے گھر پر حملہ کیا اور ایک سرحدی پولیس اہل کار اور ایک شہری کو ہلاک کردیا۔حملہ آوروں نے عبدالرزاق کے گھر پر ملحقہ سکول کی عمارت سے فائرنگ کی گئی جس کے بعد حملہ آوروں نے گھر میں گھسنے کی کوشش کی ۔اس دوران افغان فورسز کی فائرنگ سے 5حملہ آور مارے گئے جبکہ ایک نے خود کو دھماکہ خیز مواد سے اڑا دیا۔عبدالرزاق سپن بولدک ضلع میں رہائش پزیر تھے۔حملے کے وقت پولیس چیف گھر پر موجود تھے لیکن انھیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔عبدالرزاق پر اس سے قبل بھی طالبان نے کئی حملے کئے لیکن وہ ہر بار محفوظ رہے۔قندھار میں عبدالرزاق کی دھاک جمی ہے۔

قندھار

مزید : صفحہ آخر