شدت پسندوں کےخلاف جنگ میں پولیس کے ناقابل فراموش کردار کی تمام دنیا معترف ہے،ناصر خان درانی

شدت پسندوں کےخلاف جنگ میں پولیس کے ناقابل فراموش کردار کی تمام دنیا معترف ...

 پشاور( پاکستان نیوز)انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان دُرانی نے آج پشاور کے مضافات میں واقع مختلف چوکیات کا دورہ کیاجہاں وہ ڈیوٹی پر موجود جوانوں سے ملے ان میں عید کے تحائف تقسیم کئے اور نقد انعامات سے نوازا۔جوانوں نے آئی جی پی کو عید کے پُر مسرت موقع پر اپنے درمیان پاکر خوشی کا اظہار کیا۔ اپنے دورے کے پہلے مرحلے میں آئی جی پی سیفن چوکی میں جوانوں سے گل مل گئے۔ آئی جی پی نے جوانوں کو ڈیوٹی پر مستعد اور چوکس پاکر ان کی فرائض کی ادائیگی کی تعریف کرتے ہوئے انہیں شاباس دی اور تاکید کی کہ وہ آئندہ بھی اس طرح الرٹ رہ کر ملک دشمن عناصر کے ناپاک عزائم خاک میں ملائیں۔ چوکی توحید آباد اور چوکی انقلاب کے دورے کے دوران بھی آئی جی پی نے جوانوں سے فرداً فرداً ہاتھ ملایا ۔ ان میں عید کے تحائف تقسیم کئے۔ اور نقد انعامات سے بھی نوازا۔ اس موقع پر جوانوں سے اپنے مختصر خطاب میں آئی جی پی نے درپیش چیلنجوں بالخصوص شورش زدہ علاقوں میں جوانوں کی دلیری اور جانفشانی کے ساتھ فرائض سرانجام دینے کی تعریف کی۔ انہوںنے کہا کہ شدت پسندوں کے خلاف جنگ میں پولیس کے ناقابل فراموش کردار کے تمام دنیا معترف ہے۔ انہوں نے کہا کہ جوانوں نے ہر مشکل گھڑی بالخصوص رمضان المبارک میں بے شمار مشکلات کے باوجود اپنے فرائض نہایت خوش اسلوبی سے انجام دیئے۔ افطاری ڈیوٹی پوانٹ پر کی لیکن عوام کے جان و مال کے تحفظ سے روگردانی نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا پولیس کی قیادت کو اپنے لیے اعزاز سمجھتے ہیں۔ اور ان کی کامیابی جوانوں کی شب و روزانتھک محنت کی مرہون منت ہے۔ آئی جی پی نے کہا کہ یقینًاآج اگر صوبے میں پُرامن فضا قائم ہے اور فورس کی عزت اور وقار میں اضافہ ہوا ہے تو یہ سب پولیس فورس کی بیش بہا قربانیوں کیوجہ سے ہےں۔ جن کے ہر رینک کے افسر و جوان نے ایک دوسرے سے بڑھ کر قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں بھی فورس کے کئی جوانوں نے فرائض کی ادائیگی کے دوران جام شہادت نوش کر کے اپنے پیشے سے لگن اور کمیٹمنٹ کا عملی ثبوت دےا ہے۔شہادت کا رتبہ ویسا ہی بڑا عظیم ہے لیکن بحیثیت مسلمان ہمارا عقیدہ ہے کہ ماہ صیام میں شہادت کے درجے پر فائز ہونا سب سے افضل درجہ رکھتا ہے۔ بلاشبہ ہمیں اپنے جوانوں کی شہادت پر حد درجہ فخر حاصل ہے۔ انشاءاللہ محکمے کے جوانوں کی یہ قربانی معاشرے کے دوسرے اداروں اور افراد کے لیے ہر دور میں مشعل راہ رہے گی۔ آئی جی پی نے کہا کہ میری دلی خواہش تھی کہ میں خود حاضرہوکر عید کی خوشیوں میں جوانوں کےساتھ شریک ہوجاوںتاکہ وہ اپنے آپ کو تنہا محسوس نہ کر سکیں۔

ناصر درانی

مزید : صفحہ آخر