تحریک انصاف کے ارکان کو ڈی سیٹ نہیں کیا جا سکتا،عمرڈار

تحریک انصاف کے ارکان کو ڈی سیٹ نہیں کیا جا سکتا،عمرڈار

لاہور( نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف کے مرکزی رہنمااورسیالکوٹ کے ڈسٹرکٹ آرگنائزر عمرڈار نے کہا کہ پی ٹی آئی کے ارکان کوڈی سیٹ نہیں کیا جا سکتا،حکمران کس بات کااحسان جتارہے ہیں اگرپی ٹی آئی کے ارکان ڈی سیٹ ہوتے توپارلیمنٹ ڈی ویلیوہوجاتی تاریخ گواہ ہے ماضی میں بھی عدلیہ سے بعض فیصلے کرتے وقت غلطیاں ہوئی ہیں ،ذوالفقارعلی بھٹو کی سزائے موت کافیصلہ بھی جوڈیشل مرڈرقراردیاجاتا ہے جبکہ بعض سیاسی پنڈت جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کو جمہوریت اورعوامی مینڈیٹ کاجوڈیشل مرڈرقراردرہے ہیں۔اپنے ایک بیان میں عمرڈارنے مزید کہا کہ پارلیمنٹ کے اندراورباہر سیاسی طورپرپی ٹی آئی کامقابلہ کرناحکمران جماعت کے بس کی بات نہیں ہے۔ میاں نوازشریف کو بخوبی اندازہ تھا پارلیمنٹ سے باہرپی ٹی آئی ان کی حکومت کوزیادہ ٹف ٹائم دے گی۔انہوں نے کہا کہ حکمران اوران کے اتحادی آئین کوموم کی ناک نہیں بناسکتے حکمران باربارپی ٹی آئی کے مینڈیٹ پرشب خون مارنے سے بازرہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگراسحق ڈار میں دم ہے توشریف خاندان اورپرویز مشرف کے درمیان ''معاہدہ''بھی پارلیمنٹ میں پیش کریں ۔ 1985ء سے آج تک شریف برادران نے مختلف حکمرانوں اور سیاسی پارٹیوں کے ساتھ میثاق جمہوریت سمیت مختلف معاہدے کئے مگر انہوں نے آج تک کسی ایک کی بھی پاسداری نہیں کی انہوں نے کہا کہ کیاعدالت عظمیٰ پرحملے کے بعدحکمرانوں نے قوم سے معذرت کی تھی فوجی ڈکٹیٹر پرویز مشرف کے ساتھ ڈیل کرکے رات کے اندھیرے میں اپنے باورچیوں سمیت ملک سے فرارہونیوالے آج ہمیں اخلاقیات اورجمہوری اقدار کادرس دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں لوٹاسازی اورعدلیہ پر حملے سمیت تمام سیاسی برائیوں کابانی کوئی اورنہیں بلکہ حکمران خود ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4