چاچڑاں شریف کے درجنوں دیہات سیلاب کی نظر ہوگئے ہیں، سردار دلشاد رند

چاچڑاں شریف کے درجنوں دیہات سیلاب کی نظر ہوگئے ہیں، سردار دلشاد رند

لاہور( خبرنگار) آل پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی سنئیر رہنما سردار دلشاد رند نے چاچڑاں شریف رحیم یارخان میں سیلابی صورتحال کے حوالے سے لاہور میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حلقہ پی پی 288میں بارشوں اور سیلاب نے تباہی مچادی چاچڑاں شریف کے درجنوں دیہات سیلاب کی نظر ہوگئے ہیں اور متاثرین کا کوئی والی وارث نہیں ہے سیلاب متاثرین کی امداد صرف فوٹو سیشن تک محدود ضلعی انتظامیہ وزیراعظم اور روزیراعلی کے پروٹوکول تک محدود ہے ظاہر پیر 249نواں کوٹ 249فتح پورکمال 249غوث پور249منظور آباد249بستی کنیاں سمیت درجنوں علاقے بارشوں کے بعد سیلاب کا منظر پیش کر رہے ہیں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر بڑے پیمانے پر پڑے ہیں اور گندگی کی وجہ سے وبائی امراض پھوٹنے کا خدشہ بڑھ چکا ہے۔ وزیر اعظم سمیت دیگر حکومتی عہدیدار فوٹو سیشن کے سوا کچھ نہیں کر رہے اور چاچڑاں شریف میں لگائے گئے امدادی کیمپ بھی انتظامیہ نے اکھاڑ لیے ہیں۔ سردار دلشاد رند نے مزید کہا کہ بارشوں کے بعد ضلع رحیم یارخان کی زراعت سے منسلک طبقہ تباہ ہوچکا ہے۔

حکومت فوری طور پر ضلع رحیم یار خان کو آفت ذدہ قرار دے اور ضلع انتظامیہ خدا کا خوف کرتے ہوئے مشکل کی اس گھڑی میں فوٹو سیشن اور وی آئی پیز کو پروٹوکول دینے کی بجائے سیلاب میں گھرے مجبور لوگوں کی مدد کرے ۔ اس موقع پر سلمان خان رند 249سردار حسین بخش 249شوکت علی رند 249چوہدری شبیر احمد249امین کمبوہ249اختر ڈوڈی اور بلو سومرو بھی موجود تھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4